ملک بھر میں عیدالاضحی پر گزشتہ سال کے مقابلے میں14 لاکھ سے زائد جانور قربان

05 ستمبر 2017

لاہور (کامرس رپورٹر) ملک میں رواں سال عیدالاضحی کے موقع پر مجموعی طور پر 90لاکھ جانوروں کی قربانی ہوئی جو گزشتہ سال کے مقابلے میں 14.7لاکھ جانور زائد ہے۔ گزشتہ سال ملک میں 75لاکھ 30ہزار کے لگ بھگ جانوروں کی قربانی کی گئی تھی۔ پاکستان ٹینرز ایسوسی ایشن کے اعدادوشمار کے مطابق رواں سال عید قرباں پر سب سے زیادہ قربانی بکروںکی ہوئی جن کی تعداد 40لاکھ رہی جبکہ 10لاکھ بھیڑوں، 30لاکھ بیلوں اور ایک لاکھ اونٹوں کی قربانی ہوئی۔ قربانی کے جانوروں کی مجموعی لاگت کا تخمینہ 24.5ارب روپے لگایا گیا جبکہ قربانی کے بعد حاصل ہونے والی کھالوں کا تخمینہ 6ارب 54کروڑ روپے لگایا گیا۔ پاکستان ٹینرز ایسوسی ایشن کے رہنما آغا سعیدین نے بتایا کہ رواں سال گرمی اور حبس کے باعث عید قرباں پر حاصل ہونے والی مجموعی کھالوں میں سے 35فیصد کا خراب ہونے کا خدشہ ہے جس کی مالیت 2.25 ارب روپے ہو گی۔ گزشتہ سال 44 فیصد کھالوں کا نقصان ہوا تھا۔کھالوں کی قیمتوں میں کمی نے ماضی کے تمام ریکارڈز کو توڑ دیا۔ ماضی میں بکر ے کی کھال 1000سے 1500جبکہ اس سال بکر ے کی کھال250سے 300دنبے کی کھال کی قیمت800سے 1200سے کم ہوکر 50روپے اور اونٹ کی کھال بھی 1000روپے سے کم ہوکر 150روپے کی ہو چکی ہے اور گائے اور بیل کی کھال 2000 سے 2500میںخریدی جا رہی ہے۔