عید‘ ٹرو‘ مرو کے روز کئی شہروں میں ٹریفک سمیت مختلف حادثات‘ 52 جاں بحق‘ سینکڑوں زخمی

05 ستمبر 2017

لاہور/کراچی/ فیصل آباد/ گڑھ مہاراجہ/ جھنگ/ ٹوبہ ٹیک سنگھ شیخوپورہ / جوثیانوالہ/ جلالپور جٹاں/ وہاڑی/ جڑانوالہ/اوچ شریف (نوائے وقت نیوز+نمائندہ خصوصی + نامہ نگاران + نمائندہ نوائے وقت + نوائے وقت رپورٹ) عید، ٹرو، مرو کے روز ملک کے مختلف علاقوں میں ٹریفک حادثات میں52افراد جاں بحق جبکہ بیسیوں زخمی ہوگئے۔ تفصیلات کے مطابق فیصل آباد سے ملتان جانیوالی بس کوریاں اڈے کے قریب ٹائر پھٹنے سے بے قابو ہو گئی اور سڑک کنارے کھڑے مسافروں کو کچل دیا جس کے نتیجہ میں ذیشان، اعظم، قاسم، زاہدہ اور سعدیہ موقع پر ہی جاں بحق ہو گئے جبکہ پانچ سالہ بچے نے سول ہسپتال میں دم توڑا، کوچ کا ڈرائیور فرار ہو گیا۔ علاقہ مکینوں نے احتجاج کیا اور ٹائر جلا کر فیصل آباد پینسرہ روڈ بلاک کر دی۔ ٹوبہ ٹیک سنگھ سے نامہ نگار کے مطابق واشنگ مشین کا سوئچ لگاتے ہوئے کرنٹ لگنے سے دوشیزہ جاں بحق ہوگئی۔ تفصیلات کے مطابق ،چک نمبر 293گ ب (شیروں ) میں اکبر کی بیس سالہ بیٹی عدیلہ کپڑے دھونے کیلئے واشنگ مشین کا سوئچ بجلی کے بورڈ میں لگانے لگی تو بجلی کا زور دار کرنٹ لگنے سے موقع پر ہی جاں بحق ہوگئی ۔فیصل آباد سے نمائندہ خصوصی کے مطابق عیدالاضحی کے تین روز کے دوران شہر بھر میں ٹریفک حادثات کے دوران خواتین و بچوں سمیت17افراد جاں بحق ‘500سے زیادہ زخمی ہو گئے ‘ شہر میں ون ویلنگ اور ہلڑ بازی عروج پر رہی ‘ پولیس ٹریفک و پٹرولنگ پولیس کی خصوصی تشکیل کردہ ٹیمیں بری طرح ناکام ہو گئیں۔چک نمبر239ر ب کا 12 سالہ مزمل ‘ چک نمبر33ج ب کا 14سالہ منیر ‘بھائی والا میں 10 سالہ عبدالستار ‘ چک نمبر103ر ب کا رہائشی عبدالکریم و لد سکندر ‘ تاندلیانوالہ کا 25سالہ امین ‘نڑوالا روڈ کا 46سالہ جاوید ‘ چک نمبر47گ ب کی 30سالہ شائینہ بی بی ‘ گٹ والا کا رہائشی چالیس سالہ شفیع ‘‘ لنڈیانوالہ کا 30سالہ رضوان‘ اسلام پورہ کے میاں بیوی زاہد پرویز اور خورشید بی بی ‘ ساتواں میل کی 27سالہ سعدیہ بی بی ‘ چک نمبر215ر ب کا 10سالہ محمد حسین‘ ککوآنہ پلی پر نو سالہ ذیشان رحمت‘ اسماعیل روڈ پر چک نمبر7ج ب کا منصور علی ‘ اور سمندری روڈ پر حفیظاں بی بی مختلف ٹریفک حادثات میں جان کی بازی ہار گئے جبکہ الائیڈ ہسپتال ‘ سول ہسپتال چاروں تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتالوں ‘ جنرل ہسپتال سمن آباد اور جنرل ہسپتال غلام محمد آباد میں ساڑھے500کے قریب ٹریفک حادثات کے زخمیوں کو لایا گیا جن میں زیادہ تعداد تیز رفتار موٹرسائیکلیں آپس میں ٹکرانے اور ون ویلروں کی ٹکر لگنے سے زخمی ہونے والوں کی ہے۔ کراچی کے علاقے مواچہ گوٹہ میں گاڑیوں کے تصادم نے دو افراد کی جان لے لی۔ ریسکیو حکام کے مطابق جاں بحق ہونے والوں میں میاں بیوی شامل ہیں۔ دو افراد معمولی زخمی بھی ہوئے۔ ادھر اُچ شریف کے قریب دو مسافر کوچز میں اوورٹیک کے دوران خوفناک تصادم ہوا۔ دونوں بسوں میں آگ لگ گئی۔ مسافروں نے کھڑکیوں کے شیشے توڑے اور چھلانگیں لگا کر جان بچائی۔جبکہ حادثہ میں دونوں گاڑیوں کے ڈرائیور ہلاک ہو گئے۔ جاں بحق ڈرائیورز کی شناخت خالد اور چنگیزی کے نام سے ہوئی ہے۔ 16 زخمیوں کو ٹی ایچ کیو علی پور منتقل کر دیا گیا جبکہ 4 معمولی زخمیوں کو موقع پر ہی طبی امداد دے کر فارغ کر دیا گیا۔ ہسپتال ذرائع کے مطابق 2 افراد کی حالت تشویشناک ہے جنہیں نشتر ہسپتال ملتان شفٹ کر دیا گیا۔ اوچ شریف کے قریب ٹینکر اور وین میں تصادم سے ٹینکر کے نیچے دب کر 7 افراد جاں بحق ہوگئے۔ جاں بحق ہونے والوں میں 4 خواتین‘ 2 بچیاں اور ایک بچہ شامل ہے۔ حادثے میں چار بچوں سمیت 7 افراد زخمی ہوئے، 7 زخمی تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال بہاولپور داخل کرا دیا گیا ہے۔فیصل آباد سے نمائندہ خصوصی کے مطابق غلام محمد آباد میں کرنٹ لگنے سے ادھیڑ عمر شخص جاں بحق ہو گیا ۔ تفصیلات کے مطابق مدینہ چوک کا رہائشی 55سالہ رفیق عید کے دوسرے روز بارش کے دوران بجلی کی موٹربند کرنے لگا تو کرنٹ زدہ ٹونٹی سے اس کا ہاتھ چھو گیا جس سے وہ موقع پر ہی جاں بحق ہو گیا ‘ اطلاع پر موقع پر پہنچے والی ریسکیو1122کی امدادی ٹیم نے موت کی تصدیق کر کے نعش لواحقین کے حوالے کر دی ۔ دریں اثناء گڑھ مہاراجہ سے نامہ نگار کے مطابق یہاں لیہ سے شورکورٹ جانیوالی کوسڑ برجی والا سٹاپ پر تیز رفتاری کے باعث مخالف سمت سے آنیوالے 2موٹرسائیکلوں اور تین بھینسوں کو ٹکرانے کے بعد درخت سے جا ٹکرائی جس کے نتیجہ میں اٹھارہ ہزاری کے رہائشی اسحاق، فوجی شہباز، افتخار احمد اور 9سالہ بچی صدف جاں بحق ہو گئے۔ جبکہ بچے سمیت دوافراد زخمی ہوگئے۔ واقعہ میں سڑک کنارے کھڑی دو قیمتی بھینسیں اور دو گائیں بھی ہلاک ہوگئیں۔جھنگ سے نامہ نگار کے مطابق مختلف حادثات میں 4 افراد جاں بحق، چار زخمی ہوگئے۔ سٹیشن چوک شمسی کارخانہ کے قریب سکیورٹی گارڈ بجلی کا کرنٹ لگنے سے جاں بحق ہوگیا۔ حویلی بہادر شاہ کے قریب دو موٹر سائیکل آپس میں ٹکرانے سے ایک شخص موقع پرجاں بحق ہوگیا جبکہ دو کو زخمی حالت میں ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں پر وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جاں بحق ہوگئے۔ جڑانوالہ سے نمائندہ نوائے وقت کے مطابق عید کے ایام میں مختلف واقعات میں تین افراد جاں بحق، جبکہ ٹریفک حادثات و لڑائی جھگڑوں میں سینکڑوں افراد زخمی ہوکر ہسپتال پہنچ گئے۔ بتایا جاتا ہے کہ تھانہ صدر کے چک نمبر کے 125گ ب مولوی والا میں محنت کش عبداللہ کا 13سالہ بیٹا غلام دستگیر پتنگ لوٹنے کے دوران چھت کے اوپر سے گزرنے والی بجلی کی تاروںسے ہاتھ لگنے سے جاں بحق ہوگیا پولیس تھانہ صدر نے پتنگ فروشوں کے خلاف کارروائی شروع کردی۔ دوسری طرف واپڈا حکا م نے بجلی کی تاروں کو گھروں کی چھتوں سے فوری ہٹانے کی ہدایت جاری کردی۔ تھانہ سٹی کے علاقہ محمودکالونی کے رہائشی بشیر احمد کا 10سالہ بیٹا علی حیدر بکرے سے کھیلتے ہوئے پائوں پھسلنے سے چھت سے صحن میں گرگیا جس سے وہ شدید زخمی ہوگیا اور زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے زندگی کی بازی ہار گیا۔ چک نمبر 205ر ب کھرڑیانوالہ تھانہ کی حدود میں مخالفین عبدالسلام وغیرہ نے دیرینہ رنجش کی بنا پر 24سالہ نوجوان شہبازولد فقیر حسین کو فائرنگ کرکے عید کے روز قتل کردیا اور فرار ہوگئے یاد رہے ملزم عبدالسلام نے 15سال قبل مقتول شہباز کے ماموںمحمد دین کو بھی قتل کردیا تھا پولیس تھانہ کھرڑیانوالہ نے مقدمہ درج کرکے فرار ملزمان کی تلاش شروع کردی۔جلالپورجٹاں سے نامہ نگار کے مطابق موٹرسائیکل اوربس میں خوفناک تصادم دو نوجوان جانبحق دو شدید زخمی بس ڈرائیورفرار مقدمہ درج تفصیل کے مطابق جلالپورجٹاں کے رہائشی چار نوجوان دوست ایک موٹر سائیکل نمبریGTN6836 پر سوار گجرات جارہے تھے کہ گجرات سے ٹانڈہ جانے والی بس نمبری LES9215 سے ٹکرا گئے جس کے نتیجے میں محسن اور عمارزخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے موقع پر ہی جاں بحق ہوگئے جبکہ عاقب اور عثمان شدید زخمی ہوگئے جن کو فوری طور پر ضلعی ہسپتال منتقل کر دیا گیا بس کا ڈرائیور موقع سے فرار ہوگیا جہاں بتایا گیا ہے کہ عاقب کی ٹانگ ٹوٹ گئی جبکہ عثمان شدید زخمی ہے۔ المناک ٹریفک حادثہ کی خبر جنگل کی آگ کی طرح شہر بھر میں پھیل گئی جس کے بعد شہر کی فضا سوگوار ہوگئی۔ متوفیان محسن اور عمار کو سیکڑوں سوگواران کی موجودگی میں نند پور قبرستا ن میںنماز جنازہ کے بعد سپرد خاک کر دیا گیا۔ پولیس تھانہ صدر جلالپورجٹاںنے نامعلوم بس ڈرائیور کیخلاف مقدمہ درج کر کے تفتیش شروع کر دی ہے۔ وہاڑی سے نامہ نگار کے مطابق وہاڑی عید کے دنوں میں ٹریفک کے متعدد حادثات، 110افراد زخمی، دو افراد جاں بحق، میلسی سائفن روڈ کے قریب دو موٹر سائیکل آپس میں ٹکرنے سے 10افراد شدید زخمی جبکہ ایک شخص جاں بحق، زخمیوں کو ٹی ایچ کیو میلسی میں فوری شفٹ کردیا۔ اس موقع پر ڈی سی علی اکبر بھٹی بھی موجود تھے اور زخمیوں کوفوری اور مفت علاج کرنے کی ہدایت کی، چار افراد کی حالت خراب ہونے کی وجہ سے بہاولپور ریفرکردیا۔ اس موقع پر اے سی میلسی عبدالغفار اور ایم ایس میلسی بھی موجودتھے۔وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے بہاولپور کے قریب ٹریفک حادثے میں قیمتی جانوں کے ضیاع پر دکھ اور افسوس‘ لواحقین سے دلی ہمدردی و اہظار تعزیت کیا ہے۔ وزیراعلیٰ نے انتظامیہ کو ہدایت کی کہ زخمی افراد کو علاج معالجہ کی بہترین سہولتیں فراہم کی جائیں۔ وزیراعلیٰ نے حادثے کے بارے میں رپورٹ طلب کرلی۔ شیخوپورہ اور جوئیانوالہ کے نمائندہ نوائے وقت اور نامہ نگار کے مطابق عید کے روز ایک کار تیز رفتاری کے باعث خانپور نہر میں جا گری جس سے دو نوجوان جاں بحق اور تین نوجوان معجزانہ طور بچ گئے‘ ایک نوجوان یاسر کی نعش نکال لی گئی ہے اور تو دوسرے نوجوان حمزہ کی تلاش جاری ہے۔ بتایا گیا ہے کہ پانچ دوست جو مقامی محلہ سلطان پورہ کے رہائشی بتائے گئے ہیں عید کے روز سیر و تفریح کیلئے لاہور جا رہے تھے کہ خانپور نہر کے قریب ان کی گاڑی بے قابو ہوکر نہر میں جا گری جس کے نتیجہ میں اس میں سوار دو نوجوان ڈوب کر جاں بحق ہو گئے اور تین نوجوانوں شہریار‘ عبداللہ اور اسامہ کو ریسکیو 1122 کی ٹیموں ن یفوری کارروائی کرتے ہوئے بچا لیا جنہیں فوری طور پر ڈی ایچ کیو ہسپتال پہنچا دیا گیا جہاں انہیں طبی امداد دی جا رہی ہے جبکہ پولیس نے جاں بحق ہونیوالے نوجوانوں کی نعشیں ضروری کارروائی کے بعد ان کے ورثاء کے حوالے کر دی ہیں۔ شانگلہ ٹاپ کے قریب وین گہری کھائی میں گر گئی۔ جس سے 2افراد جاں بحق 5 زخمی ہو گئے۔ وین میں ایک ہی خاندان کے لوگ سیر کیلئے کبل سے شانگلہ جا رہے تھے۔ساہیوال میں عید کے موقع پر طوفانی بارش سے گلی نمبر ایک غلہ منڈی کا 6 سالہ بچہ علی جاوید بجلی کا جھٹکا لگنے سے جاں بحق ہوگیا۔