فیصل آباد: کٹی پتنگ پکڑنے شاپنگ مال جانے والے بچے کو سکیورٹی گارڈ نے قتل کردیا

05 ستمبر 2017

فیصل آباد ، لاہور (نمائندہ خصوصی+ خبرنگار) سرگودھا روڈ پر کٹی پتنگ پکڑنے شاپنگ مال کے احاطے میں جانے والے 10 سالہ بچے کو سکیورٹی گارڈ نے گولی مار کر قتل کر دیا۔ تھانہ ملت ٹاؤن کے علاقہ سرگودھا روڈ پر سوئی گیس آفس کے قریب واقع پرل سٹی میں بنے ہوئے ایک مقامی شاپنگ مال کے صحن میں گرنے والی کٹی ہوئی پتنگ اٹھانے کے لئے شادمان ٹاؤن کے رہائشی عرفان کا بیٹا 10 سالہ ثقلین اٹھانے گیا تو سیکورٹی پر تعینات ملزم نے اس پر فائرنگ کر دی جس کی زد میں آ کر بچہ شدید زخمی ہو گیا جسے تشویشناک حالت میں الائیڈ ہسپتال لے جایا گیا جہاں وہ دوران علاج زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گیا۔ ڈاکٹرز نے نعش ضروری کارروائی کے بعد پولیس کے حوالے کر دی۔ پولیس نے سکیورٹی گارڈ گرفتار کرلیا ہے۔جاں بحق ہونے والا ثقلین دو بہنوں کا اکلوتا بھائی تھا۔ ثقلین کے والد نے کہا کہ مجھے انصاف ملنے کی امید نہیں، پاکستان میں صرف امیر کو انصاف ملتا ہے، غریب کو نہیں۔ معصوم اور بے گناہ بچے کو سینے میں گولی مار کر قتل کردیا گیا، بچے کی ماں کا رو رو کر برا حال ہے۔ دوسری طرف وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف نے سکیورٹی گارڈ کے ہاتھوں بچے کے قتل کا نوٹس لیتے ہوئے واقعہ کی تحقیقات کا حکم دیا ہے۔ وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ بچے کے قتل کے ذمہ دار کو گرفتار کرکے قانون کے مطابق سزا دی جائے۔ وزیراعلیٰ نے مقتول بچے کے لواحقین سے دکھ اور افسوس کا اظہار بھی کیا۔