اللہ نے حضرت ابراہیمؑ کی قربانی کے بدلے امت مسلمہ کو پیدا کیا: مولانا طارق جمیل

05 ستمبر 2017

تلمبہ(نامہ نگار) عالمی مبلغ اسلام حضرت مولانا طار ق جمیل نے دارالعلوم عیدگاہ عربیہ قادریہ تلمبہ میں عیدالاضحی کے عظیم اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے فرمایا کہ حضرت ابراہیم ؑ نے اپنا سر اللہ تعالیٰ کے سامنے جھکا دیا اور اللہ تعالیٰ کی محبت میں اپنے جذبات خواہشات مال و جان حتیٰ کہ اپنی عزیز ترین ہستی کو اللہ کے لئے قربان کرنے کا نہ صرف عزم کیا بلکہ عملی طورپر کر کے دکھایا تو اللہ پاک نے عیدالاضحی کا عظیم دن حضرت ابراہیمؑ کے نام کر دیا اس طرح وہ قیامت تک کے لئے مثال بن گئے حضرت ابراہیمؑ کی زندگی کا یہ پیغام ہے کہ انسان کو اللہ رب العزت کے حکم کے سامنے اپنی قیمتی سے قیمتی ترین چیز کو بھی قربان کرنے سے دریغ نہیں کرنا چاہئے قربانی کے بدلے اللہ ملتاہے اللہ تعالیٰ کا حکم ماننے سے دنیا و آخرت کی کامیابی حاصل ہوتی ہے انہوں نے مزید کہا کہ جھوٹ‘ وعدہ خلافی ‘والدین کی نافرمانی‘ دھوکہ‘ فریب‘ جوا ‘سود ‘شراب نوشی‘ زنا کاری و بدکاری‘ الزام تراشی اور لوگوں پر ظلم کرنا چھوڑ دو جس امت کی بنیاد اتنی عظیم قربانی پر ہو پھر بھی وہ کہیں کہ جھوٹ کے بغیر سیاست‘ تجارت اور کاروبار نہیں چلتا ۔ حضورؐپاک نے فرمایا میرا امتی ہر گناہ کر سکتا ہے لیکن جھوٹ نہیں بول سکتا آج جھوٹ اور دھوکہ عام ہے۔ انہوں نے مزید فرمایا کہ اللہ تعالیٰ نے حضرت ابراہیمؑ کی عظیم قربانی کے بدلے امت مسلمہ کو پیدا کیا جو دین کے لئے قربانی دے گی ۔ حضورؐ پاک نے دین کے لئے اپنا خون پیش کیا صحابہ کرام نے بھی مال جان کی قربانیاں دیں میرے نبیؐ کے گلشن کے پھول میدان کربلا میں قربان ہو گئے۔ مولانا طارق جمیل نے 17 سال بعد عیدالاضحی کی نماز تلمبہ میں پڑھائی۔
مولانا طارق جمیل