دہشتگردوں سے زیادہ نقصان معاشی تخریب کاروں نے پہنچایا: سراج الحق

05 ستمبر 2017

لاہور (خصوصی نامہ نگار)امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ ملک اس وقت چاروں طرف سے خطرات میں گھرا ہوا ہے۔ 70 سال سے اقتدار پر مسلط کرپٹ ٹولے نے ملکی معیشت کو کھوکھلا کر دیا ہے‘ ملک کو غاروں میں بیٹھے ہوئے دہشتگردوں سے زیادہ نقصان اقتدار کے ایوانوں میں موجود معاشی دہشتگردوں نے پہنچایا ہے۔ موجودہ دور میں سٹیٹس کو کی قوتیں اور باطل نظام ہی فرعون، نمرود اور ابوجہل ہیں۔ ان بتوں کو توڑنا عین سنت ابراہیمی ہے۔ طاغوتی قوتیں انسانوں کا استحصال کر رہی ہیں۔ انسانوں کو خالق کی بجائے اپنی ذات کی طرف بلانے والا لیڈر نہیں، بہروپیا ہوتا ہے جو انسانوں کو گمراہی کے رستے پر چلاتا ہے۔ جامع مسجد منصورہ میں نماز عیدالاضحی کے بڑے اجتماع سے خطاب اور بعدازاں میڈیا میں گفتگو میں سراج الحق نے کہاکہ وقت کے فرعون ٹرمپ نے دھمکی دی ہے کہ اگر پاکستان نے امریکہ کا ساتھ نہ دیا تو خطرناک نتائج کا سامنا کرنا پڑے گا۔ ہم کہتے ہیں کہ اگر ٹرمپ نے اپنا رویہ نہ بدلا اور پاکستان کو دھمکیاں دینے سے باز نہ آیا تو امریکہ کو منہ کی کھانا پڑے گی۔ اللہ نے جس کے غرور کو خاک میں ملانا ہوتا ہے، اسے افغانستان کے پہاڑوں میں لے آتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ کشمیر، فلسطین اور برما میں مسلمانوں کا قتل عام جاری ہے‘ لاکھوں مسلمانوں کی زندگی اجیرن کر دی گئی ہے۔ برما میں چند روز میں ہزاروں مسلمانوں کو شہید اور زخمی کر دیا گیا ہے اور لاکھوں برمی مسلمانوں کو ان کے گھروں سے نکال دیا گیا ہے مگر امریکہ سمیت تمام عالمی قوتیں خاموش تماشائی بنی ہوئی ہیں۔ سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ 70 سال میں جرنیل ہوں یا سول حکمران، سب نے اللہ کی بغاوت پر مبنی ظالمانہ نظام کو مسلط رکھا اور ایک دن کے لئے بھی ملک میں قرآن و سنت کا عدل و انصاف پر مبنی نظام نافذ نہیں کیا گیا۔ جس نے بھی پاکستان کو لوٹا ہے، اسے احتساب کے کٹہرے میں کھڑا کرکے لوٹی گئی قومی دولت واپس لینی چاہئے۔ علاوہ ازیں سراج الحق نے وزیر خارجہ خواجہ محمد آصف کو ٹیلی فون کیا۔ انہوں نے کہا کہ برما میں مسلمانوں کا قتل عام جاری ہے‘ لاکھوں مسلمانوں کی زندگی اجیرن کر دی گئی ہے۔ مسلمانوں پر جاری مظالم رکوانے کے لئے حکومت پاکستان فوری اقدامات کرے۔
سراج الحق