جمعیت علماء اسلام کے زیراہتمام مسلمانوں پر مظالم کیخلاف یوم احتجاج منایا گیا

05 ستمبر 2017

لاہور (خصوصی نامہ نگار) جمعیت علماء اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمن کی اپیل پر ملک بھر میں عید کے اجتماعات جو کھلے پارکوں‘ مدارس اور گرائونڈ میں ادا کئے گئے۔ ان میں امریکی صدر کے بیان اور میانمار میں مسلمانوں پر بدترین مظالم کے خلاف یوم احتجاج منایا گیا۔ مساجد اور کھلے میدانوں میں علماء خطباء نے احتجاجی قرارداد میں امریکی صدر کے بیان کی شدید مذمت کی اور اسے کھلی دہشت گردی قرار دیا۔ جے یو آئی کے قائم مقام سیکرٹری جنرل مولانا امجد خان نے کہا کہ پوری قوم امریکی صدر کے بیان کے خلاف سراپا احتجاج ہے۔ قائد جمعیت مولانا فضل الرحمن نے 8 ستمبر سے لیکر 15 ستمبر تک ملک بھر میں احتجاجی مظاہروں کا اعلان بھی کیا ہے۔ مولانا محمد امجد خان نے کہا کہ میانمار میں مسلمانوں کا قتل عام کھلی دہشت گردی ہے۔ عالمی قوتیں خاموش تماشائی بنی ہوئی ہیں۔ جے یو آئی مظلوم میانمار کے مسلمانوں کے دکھ درد میں برابر کی شریک ہے۔ مولانا فضل علی حقانی‘ مولانا عبدالقیوم ہالیجوی‘ مولانا محمد یوسف‘ سید فضل آغا‘ محمد اسلم غوری‘ حاجی شمس الرحمن‘ مفتی ابرار احمد نے کہا کہ ملک کی سلامتی اور استحکام کیلئے پوری قوم متحد ہے۔ مولانا راشد خالد محمود‘ مولانا شجاع الملک‘ مولانا ڈاکٹر عتیق الرحمن‘ مولانا عبداللہ جتک نے کہا کہ خارجہ پالیسی کا قبلہ درست کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ کی پالیسیوں سے ہی دنیا میں دہشت گردی کو تقویت ملی ہے۔