ایک تصویر…ایک کہانی

05 ستمبر 2017

اوکاڑہ کا نواز گرشتہ دس سالوں سے کچی گری (ناریل) فروخت کرتا ہے اس کا کہنا ہے کہ میٹرک کرنے کے بعد مزدوری کی خاطر وہ اسلام آباد میں تقریباً آٹھ سال سے یہی کام کرتا رہا ہے۔ اب کچھ سالوں سے وہ لاہور میں مزدوری کر رہا ہے اس کے دو بھائی زیر تعلیم ہیں اور دو بھائی گھر میں رکھی ہوئی چند بھینسوں کی دیکھ بھال اور ان کے دودھ کو فروخت کرکے گزر بسر کرتے ہیں۔ ساتھ ساتھ تھوڑی سی زمین ہے کٹائی کے موسم میں یہ اپنے بھائیوں کا ہاتھ بٹانے اپنے آبائی علاقے چلا جاتا ہے۔ شادی شدہ ہوں ایک چھوٹی بیٹی ہے۔ گھر اپنا ہے جس میں سارے بھائی رہتے ہیں۔ سارادن مزدوری کے بعد ایک ہزار روپے مل جاتاہے جس سے یہ اپنے گھر والوں کے ساتھ پرسکون زندگی بسر کر رہا ہے۔ (فوٹو گل نواز)