نوازشریف نےکون سی کرپشن کی؟انہیں سیاست سےاس لئے نکالا گیا کہ وہ کسی کے اشارے پر نہیں چلتے:سعدرفیق

Mar 05, 2018 | 15:01

ویب ڈیسک

وفاقی وزیرخواجہ سعدرفیق نے کہا ہے کہ نوازشریف کو سیاست سے اس لئے نکالا گیا کہ وہ کسی کے اشارے پر نہیں چلتے، اب انہیں جیل میں ڈالنے کی تیاریاں کی جارہی ہیں، ہمیں کام نہیں کرنے دیا گیا کبھی عمران خان اور کبھی ریاستی اداروں میں موجود منفی لوگوں نے رخنہ ڈالا،اب منہ بند کرنے کی روایت ختم ہونی چاہئے ،پاکستان لوگوں کی بے عزتی کرنے سے نہیں عوام کی مرضی سے چلے گا۔ لاہور میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ ملک میں گزشتہ 70 برسوں سے سیاستدانوں کو چور اور ڈاکو ہی کہا جاتا رہا ہے، پہلے ہمارے بڑوں اور اب ہم یہ باریاں دے رہے ہیں، لیکن یہ سب کب تک چلتا رہے گا کس کس کے منہ بند کریں گے اور کس کس کو چور اور ڈاکو قرار دے کر ترقیاتی کاموں میں رخنہ ڈالا جائے گا، سیاست کو جتنا دباتے ہیں اتنی ہی شدت سے باہر آتی ہے، لوگ نہیں چاہتے فیصلوں کے ذریعے مقبول لیڈرکو نکال دیا جائے کیوں کہ مقدمات بنا کر قیادت کی محبت کو عوام کے دلوں سے نہیں نکالا جاسکتا، عوام فیصلے کے ذریعے نہیں ووٹ کے ذریعے تبدیلی چاہتے ہیں۔ سعدرفیق کا کہنا تھا کہ نوازشریف نے کون سی کرپشن کی؟ انہیں اس لئے نکالا گیا کہ وہ کسی کے اشارے پر نہیں چلتے، سابق وزیراعظم جب بھی اقتدار میں آئے تعمیر و ترقی کا طوفان آتا ہے، وہ پاکستان میں موٹرویز، موبائل فون اور ترقی لے کرآئے، میٹرو لاہور میں ہی نہیں اب راولپنڈی، اسلام آباد، ملتان اور فیصل آباد میں بھی بن رہی ہے، تعمیر و ترقی میں پنجاب سب سے آگے ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ہمیں کام نہیں کرنے دیا گیا کبھی عمران خان اور کبھی ریاستی اداروں میں موجود منفی لوگوں نے رخنہ ڈالا، جو بیورو کریٹ محنت سے کام کرے اسے جیل میں ڈال دیا جاتا ہے اور ایٹمی دھماکا کرنے والے وزیراعظم کو بھی جیل میں ڈالنے کی تیاریاں کی جارہی ہیں،  آج پاکستان کا نام گرے لسٹ میں ڈال دیا گیا اور دنیا پاکستان کو شک کی نگاہ سے دیکھ رہی ہے۔وفاقی وزیرنے کہا کہ اب ایسا نہیں چلے گا اب منہ بند کرنے کی روایت ختم ہونی چاہئے پاکستان لوگوں کی بے عزتی کرنے سے نہیں عوام کی مرضی سے چلے گا اور تبدیلی ووٹ کے ذریعے ہی آئے گی، شیر زنجیر توڑ دے گا 2018 میں مسلم لیگ (ن)ایک بار پھر دو تہائی اکثریت سے واپس آئے گی اور عوام کو روشن پاکستان دے گی۔ (ن)لیگ اداروں کا احترام کرتی ہے،کسی سے جھگڑا نہیں چاہتے واپس آکرمحاذآرائی نہیں کریں گے۔

مزیدخبریں