پاکستان مسلم لیگ (ن) نے اپنا انتخابی منشور پیش کر دیا

Jul 05, 2018 | 19:09

ویب ڈیسک

مسلم لیگ ( ن )کے صدر شہباز شریف نے اپنی پارٹی کا انتخابی منشور پیش کردیا ہے۔پنجاب کے صوبائی دارالحکومت لاہور میں پارٹی منشور پیش کرتے ہوئے صدر( ن ) لیگ شہبازشریف نے کہا کہ 2013 سے پہلے لاکھوں لوگ بے روزگار تھے، 12 گھنٹے لوڈشیڈنگ تھی، معیشت تباہ ہوچکی تھی اور  صنعتوں کا پہیہ رک چکا تھا

لیکن( ن ) لیگ کی حکومت آنے کے بعد 11ہزار میگا واٹ بجلی پیدا کی، سی پیک جیسا عظیم منصوبہ تیار کیا، شمسی توانائی کو بروئے کارلایا گیا  اور ترقی کا سفر شروع ہوا، ملک میں شفاف ترین منصوبے لگانے کا نیاریکارڈقائم کیا اور توانائی منصوبوں میں قوم کے160ارب روپے بچائے ، زراعت کو مضبوط کرنے کے لیے ( ن ) لیگ کی حکومت نے بڑے اقدامات کیے اورخودروزگاراسکیم جیساتاریخی پروگرام دیا ، نوازشریف کی حکومت میں کھاد کی قیمت آدھی کردی گئی۔انہوں نے کہا کہ کراچی سمیت ملک بھر میں امن قائم کیا اور امن و امان قائم کرنے کا مشن نوازشریف کا تھا، نوازشریف نے صحت عامہ سہولیات میں انقلابی اقدامات اٹھائے اور اصلاحات کیں. شہباز شریف نے

کہا کہ آنے والے دنوں میں سب سے بڑا مسئلہ پانی کا ہے، بھارت ڈھٹائی سے ڈیم پر ڈیم بنا رہا ہے اس لیے دیامر بھاشا ڈیم ہماری سب سے پہلی ترجیح ہے۔انہوں نے تمام فریقین سے الیکشن کے فوری بعد بھاشا ڈیم پر کام شروع کرنے کی درخواست کرتے ہوئے کہا کہ ڈیموں کے لیے چندہ بھی اکٹھا کرنا پڑے تو کریں گے۔انہوں نے کہا کہ آئندہ حکومت کا موقع ملا تو ہماری گزشتہ حکومت میں جاری کیے گئے ہیلتھ کارڈ کو ملک بھر میں پھیلائیں گے، ہرسکول میں ٹیکنیِکل اور ووکیشنل سینٹر بنائیں گے، دیہاتوں میں ایگرو بیس انڈسٹری لگائیں گے اور ملک میں سرمایہ کاری کے فروغ کے لیے کام کریں گے۔ شہباز شریف نے کہا کہ ہم پنجاب ایجوکیشن انڈومنٹ فنڈز کو پورے پاکستان تک پھیلائیں گے، غریب بچیوں کے ماہانہ وظیفے کو جاری رکھیں گے، محروم طبقے کو اپنے پیروں پر کھڑا کرنا ہمارا منشور ہے۔شہبازشریف نے کہا کہ پاکستان کی بڑی آبادی کرائے کے گھروں میں رہتی ہے، اللہ نے موقع دیا تو جس طرح ہم نے پاور پلانٹ لگائے اسی طرح لاکھوں لوگوں کو ہاوسنگ سکیم بنا کر دیں گے، ہاوسنگ

سکیم بننے سے لاکھوں لوگوں کو روزگار بھی ملے گا۔ اس کے علاوہ پبلک ٹرانسپورٹ کو مزید بہتر بنانے کے لیے پانچ سالوں میں کام کریں گے۔ مسلم لیگ ( ن )کی سابق حکومت کی پانچ سالہ کارکردگی پیش کرتے ہوئے پارٹی صدر نے کہا کہ 2013 میں بجلی بحران اور امن و امان ایک بہت بڑا مسئلہ تھا اور لوڈشیڈنگ کی وجہ سے پورا ملک

سراپا احتجاج تھا۔انہوں نے کہا کہ 2013 میں ملک بھر میں واپڈا کے دفاتر کے باہر احتجاج کیا جاتا تھا، بجلی نہ ہونے کی وجہ سے بے روزگاری میں اضافہ ہو رہا تھا لیکن نواز شریف نے 2013 میں وعدہ کیا تھا کہ بجلی بحران کا خاتمہ کروں گا۔شہباز شریف نے کہا کہ ہم نے 5 سالوں میں 11 ہزار میگاواٹ بجلی بنائی، ایل این جی کے منصوبوں کے ذریعے 5 ہزار میگاواٹ بجلی سسٹم میں آئی مسلم لیگ ( ن )نے نیلم جہلم منصوبے کو قابل عمل بنایا، تاریخ میں پہلی بار شمسی توانائی سے چلنے والے منصوبے لگائے گئے، جبکہ تربیلا فور سے ایک ہزار میگاواٹ بجلی سسٹم میں شامل

ہوئی۔انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ( ن )نے کراچی سمیت پورے ملک میں امن قائم کیا، ہمارے دور میں برق رفتار اور شفاف منصوبے لگے، نواز شریف نے ہیلتھ کارڈ کا اجرا کیا اور حکومت نے زراعت کو مضبوط کیا، کسانوں کو بلاسود قرضے دیئے گئے، جبکہ 5 سال میں پنجاب میں سڑکوں پر 100 ارب روپے خرچ کیے گئے۔کرپشن کے الزامات پر شہباز شریف نے کہا کہ نیب کو چیلنج کرتا ہوں کہ وہ ایک پائی کی کرپشن ثابت کردے جبکہ پاک۔ چین اقتصادی راہداری (سی پیک) کی سرمایہ کاری پر بھی کوئی اعتراض نہیں اٹھا سکتا۔

مزیدخبریں