مزید 3 جاں بحق‘ محمد جاوید ایم ایس پی آئی سی تعینات‘ ینگ ڈاکٹرز کا احتجاج

05 فروری 2012
لاہور + اسلام آباد (نیوز رپورٹر + نمائندہ خصوصی+ ایجنسیاں) پی آئی سی کی ادویات کے ری ایکشن سے لاہور میں مزید3 مریض دم توڑ گئے، محکمہ صحت پنجاب نے ڈاکٹر جاوید کو ایم ایس پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی تعینات کر دیا، ان کے چارج سنبھالنے کے موقع پر ینگ ڈاکٹرز نے احتجاج شروع کر دیا اور چارج لینے سے روکتے رہے۔ امریکی سفارتخانہ نے سفارتی عملے اور اپنے شہریوں کو افروز فارماسیوٹیکل کمپنی کی ادویات کے استعمال سے سختی سے روک دیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز گنگا رام ہسپتال میں داخل مزنگ کا رہائشی60 سالہ پرویز، قصور کا رہائشی 55 سالہ غلام علی اور رنگ محل کی رہائشی 60 سالہ شاہدہ بی بی سروسز ہسپتال میں ادویات کے ری ایکشن کے باعث دم توڑگئے۔ محکمہ صحت کی جانب سے متاثرہ مریضوں کا علاج معالجہ جاری ہے لیکن مکمل تحقیق کے باوجود ہلاکتوں پر مکمل قابو نہیں پایا جا سکا ہے۔ ڈاکٹر جاوید نے اپنے عہدے کا چارج بھی سنبھال کے لئے ہسپتال پہنچے تو ینک ڈاکٹرز ایسوسی ایشن حامد بٹ گروپ نے انہیں چارج لینے سے روک دیا۔ ینگ ڈاکٹرز نے موقف اختیار کیا کہ حکومت نے ڈاکٹروں کے خلاف کارروائی کرکے وعدہ خلافی کی ہے۔ نئے ایم ایس کو تعینات نہیں ہونے دیںگے۔ بعدازاں ایم ایس نے اپنے عہدے کا چارج سنبھال لیا۔ میڈیکل سپرنٹنڈنٹ سروسز ہسپتال ڈاکٹر جاوید نے بتایا کہ انہوں نے پی آئی سی کے ایم ایس کی ذمہ داریاں ایک چیلنج کے طور پر قبول کی ہیں۔ امراض قلب کے اس ہسپتال کو دوبارہ مریض دوست ادارہ بنانے کے عزم کے ساتھ ایم ایس کی ذمہ داری سنبھالی ہے۔ وزیراعلی شہباز شریف کی کوشش سے اس عظیم ادارے کی شہرت کو داغدار کرنے میں ملوث عناصر بہت جلد کیفر کردار کو پہنچیں گے۔ تحقیقات کرنے والی پولیس کی ٹیم نے گزشتہ روز کراچی جا کر ادویہ ساز ادارے ”افروز“ کا ریکارڈ قبضہ میں لے لیا۔ ڈی آئی جی ذوالفقار چیمہ کی سربراہی میں قائم تین رکنی ٹیم نے سرکاری ہسپتالوں کو ادویات سپلائی کرنے والی فیکٹری افروز فارماسیوٹیکل کو سیل کرتے ہوئے تمام متعلقہ ریکارڈ قبضہ میں لے کر تحقیقات شروع کر دیں۔ امریکی سفارتخانے کی طرف سے جاری ہدایت نامے میں امریکی شہریوں کو افروز فارماسیوٹیکل کی ایک سو ستائیس ادویات استعمال کرنے سے روک دیا ہے۔ ہدایت نامے میں مزید کہا گیا ہے کہ ڈبلیو ایچ او کی جانب سے کلیئرنس ملنے تک یہ ادویات استعمال نہ کی جائیں۔ ہدایت نامے کے مطابق کہ آئیسو ٹیب نامی دوا انتہائی مضر صحت ہے جن امریکی شہریوں نے افروز کمپنی کی دوا استعمال کی ہے وہ فوراً اپنے معالج سے رجوع کریں۔ سیکرٹری صحت کل تحقیقات کا تمام ریکارڈ سپریم کورٹ میں پیش کریں گے۔