گیلانی کو سزا ہوئی تو خورشید شاہ نئے وزیراعظم ہوں گے: وفاقی پارلیمانی سیکرٹری

05 فروری 2012
کراچی (سٹاف رپورٹر + نوائے وقت رپورٹ) سپریم کورٹ سے وزیراعظم یوسف گیلانی کو توہین عدالت کیس میں سزا ہونے کی صورت میں پیپلز پارٹی نے نیا وزیراعظم لانے کا فیلہ کر لیا ہے، وفاقی پارلیمانی سیکرٹری میاں عبدالستار نے کہا ہے کہ اگر سپریم کورٹ نے یوسف گیلانی کو ہٹایا تو خورشید شاہ نئے وزیراعظم ہوں گے تاہم اس معاملے پر پیپلز پارٹی میں اختلاف رائے پیدا ہو گیا ہے۔ پیپلز پارٹی کے سیکرٹری اطلاعات قمر الزماںکائرہ نے میاں عبد الستار کے بیان کو ان کی ذاتی رائے قرار دیا ہے۔ عبدالستار کا کہنا تھا کہ نئے وزیراعظم کے لئے پیپلز پارٹی نے تین چار نام شارٹ لسٹ کئے ہیں جن میں خورشید شاہ کا نام سرفہرست ہے۔ ادھر میاں عبدالستار کے بیان کو پیپلز پارٹی میں اختلافات کی ابتدا قرار دیا جا رہا ہے۔ بعض حلقوں کا خیال ہے کہ میاں عبدالستار نے ایک اعلیٰ شخصیت کی ہدایت پر بیان دیا ہے۔ باخبر حلقوں کا کہنا ہے کہ صدر، وزیراعظم کے درمیان ملاقات میں وزیراعظم نے صدر کو یقین دلایا ہے کہ وہ ان کے ساتھ کھڑے رہیں گے اور ہائی کمان کے فیصلے کے مطابق عدالت میں پیش ہو کر مقدمات کا سامنا کریں گے۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ صدر دو ہفتوں سے کراچی میں مقیم تھے اور وہ آج ہی اسلام آباد پہنچے تھے رات کو انہوں نے وزیراعظم کو طب کر لیا۔ میاں عبدالستار نے کہا کہ عدلیہ نے وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کو سزا دی تو فیصلہ قبول کریں گے، عدلیہ سے تصادم نہیں کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ خواہش ہے کہ آزاد عدلیہ آزاد فیصلے کرے فوج کے زیر اثر فیصلے نہ کرے۔