یونس خان اور اظہر علی کی ذمہ دارانہ بیٹنگ‘ دبئی ٹیسٹ پر پاکستان کی گرفت مضبوط‘انگلینڈ پر180 رنز کی برتری

05 فروری 2012
دبئی (بی بی سی ڈاٹ کام) دبئی میں تیسرے ٹیسٹ میچ کے دوسرے دن یونس خان اور اظہر علی کی ذمہ دارانہ بیٹنگ کے نتیجے میں پاکستانی ٹیم نے ایک بار پھر انگلش ٹیم کے گرد گھیرا تنگ کر دیا ہے۔ کھیل کے اختتام پر پاکستان نے دو وکٹوں کر نقصان پر 222 رنز بنا لئے۔ پاکستان کو انگلینڈ پر 180 رنز کی برتری حاصل ہے جبکہ اس کی 8 وکٹیں باقی ہیں۔ دوسرے دن کی خاص بات پاکستانی بلے بازوں یونس خان اور اظہر علی کی عمدہ بلے بازی تھی۔ یونس خان نے گذشتہ روز ناکام اننگز کی کسر اپنی بیسویں ٹیسٹ سنچری سے پوری کر دی۔ یہ اس سیریز میں کسی بھی بیٹسمین کی پہلی سنچری بھی ہے۔ کھیل کے اختتام پر وہ 115 رنز پر کھیل رہے تھے۔ ان کی اننگز میں ایک چھکا اور گیارہ چوکے شامل تھے۔ اظہر علی اپنی دوسری ٹیسٹ سنچری کی طرف بڑھتے ہوئے ایک چھکے اور تین چوکوں کی مدد سے 75 رنز پر ناٹ آﺅٹ تھے۔ دونوں سیریز کی سب سے بڑی پارٹنرشپ میں 194 رنز کا اضافہ کر چکے ہیں۔ یونس اور اظہر نے ٹیم کو اس وقت سنبھالا جب 42 رنز کی انگلینڈ کی برتری کو ختم کرنے سے پہلے ہی دونوں اوپنرز توفیق عمر اور محمد حفیظ آﺅٹ ہو چکے تھے۔ توفیق عمر 6 رنز بنا کر اینڈرسن کی گیند پر سلپ میں سٹراس کے ہاتھوں کیچ ہوئے جبکہ حفیظ کو 21 رنز پر مونٹی پنیسر نے ایل بی ڈبلیو کیا۔ اس سے پہلے انگلینڈ کی پوری ٹیم پہلی اننگز میں 141 رنز بنا کر آﺅٹ ہو گئی۔ دوسرے دن انگلینڈ نے 104 رنز 6 کھلاڑی آﺅٹ پر اننگز شروع کی تو پاکستانی بولرز کو بساط لپیٹنے میں 12 اوورز لگے۔ انگلینڈ کی جانب سے کپتان سٹراس نے 5 چوکوں کی مدد سے 56 رنز کی ذمہ دارانہ اننگز کھیلی۔ پاکستان کی جانب سے عبدالرحمن نے 40 رنز کے عوض 5 وکٹیں لی جبکہ سعید اجمل نے تین اور عمر گل نے 2 کھلاڑیوں کو آﺅٹ کیا۔ ابوظہبی ٹیسٹ کی دوسری اننگز میں 6 وکٹوں کے بعد یہ عبدالرحمن کی ٹیسٹ کرکٹ میں دوسری بہترین کارکردگی ہے۔ اس سیریز میں پاکستانی سپنر سعید اجمل بیس اور عبدالرحمن 17 وکٹیں حاصل کر چکے ہیں۔