فیول ایڈجسٹمنٹ: گزشتہ برس کے مقابلے میں بجلی کی قیمتیں بڑھ گئیں

05 اگست 2015

لاہور (نیوز رپورٹر) نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) کی طرف سے مئی 2015ء کے بلوں میں فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کی مد میں تقریباً 3 روپے 2 پیسے یونٹ کمی کی گئی ہے، گھریلو صارفین کو ستمبر 2015ء کے بلوں میں اس کا فائدہ پہنچے گا۔ اس حوالے سے دیکھا جائے تو گزشتہ برس کے مقابلے میں بجلی کی قیمتیں بڑھی ہیں۔ نیپرا کی طرف سے 31 اکتوبر 2014ء کی جو قیمتیں مقرر کی گئی تھیں، ان میں گھریلو صارفین جن کا لوڈ 5 کلوواٹ تھا، ان میں 100 یونٹس استعمال کرنے والوں کو 10 روپے 50 پیسے فی یونٹ، 200 یونٹس استعمال کرنے والوں کو 12 روپے 50 پیسے فی یونٹ، 201 سے 300 یونٹس استعمال کرنے والوں کو بھی 12 روپے 50 پیسے فی یونٹ، 301 سے 700 یونٹس استعمال کرنے والوں کو 15 روپے فی یونٹ اور 700 یونٹ سے زائد استعمال کرنے والوں کو 17 روپے 50 پیسے فی یونٹ کے حساب سے بل بھجوایاگیا تھا۔ مجموعی طور پر صارفین نے ساڑھے 11 روپے سے لے کر ساڑھے 17 روپے فی یونٹس کے حساب سے بل ادا کیا۔ مئی 2014ء میںکول کا یونٹ 5 روپے، فرنس آئل کا تقریباً 15 روپے، گیس کا 5 روپے، نیوکلیئر کا سوا روپے، مکس جنریشن کا تقریباً سوا 10 روپے اور ایران سے امپورٹ 9 روپے 79 پیسے، یوں مجموعی طور پر 7 روپے 20 پیسے کا یونٹ بنا۔ اس میں سستی ترین پن بجلی بھی شامل ہے۔ جبکہ مئی 2015ء میں فرنس آئل کا یونٹ 13 روپے 88 پیسے، فرنس آئل 9 روپے 92 پیسے، گیس 5 روپے 57 پیسے، نیوکلیئر 1 روپے 18 پیسے، ایران سے امپورٹ 10 روپے 2 پیسے اور مکس یونٹ 6 روپے 46 پیسے میں پڑا۔ اگر دیکھا جائے تو عالمی سطح پر جس قدر تیل کی قیمتوں میں کمی ہوئی ہے، اسی تناسب سے بجلی کی قیمتوں میں کمی نہیں کی گئی۔