پشاور: اراضی سکینڈل میں گرفتار مرید کاظم سمیت 4 ملزمان جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے

05 اگست 2015

پشاور (این این آئی) پشاور کی احتساب عدالت نے سرکاری اراضی کے میگا سکینڈل میں گرفتار سابق صوبائی وزیر مال سید مرید کاظم سمیت چار گرفتار ملزمان کو 9دن کے جسمانی ریمانڈ پر نیب کے تحویل میں دے دیا۔ سابق صوبائی وزیر، اسسٹنٹ کمشنر لکی مروت و سابق ڈسٹرکٹ ریونیو آفیسر قیوم نواز، ڈسٹرکٹ ریونیو اینڈ سٹیٹ آفیسر ریاض محمد اور اسسٹنٹ بورڈ آف ریونیو گل حسن کو منگل کے روز جج محمد ابراہیم خان کی احتساب عدالت میں پیش کیا گیا۔ احتساب کمشن کی خصوصی عدالت نے کرپشن، اختیارات کے ناجائز استعمال اور بدعنوانیوں کے الزام میںگرفتار سابق صوبائی وزیر معدنیات ضیاء اللہ آفریدی کے جسمانی ریمانڈ میں مزید 3دن کی توسیع کرتے ہوئے احتساب کمشن کے حوالے کر دیا۔ سابق صوبائی وزیر کو گزشتہ 13روزہ جسمانی ریمانڈ مکمل ہونے کے بعد منگل کے روز احتساب عدالت کے جج حیات علی شاہ کی عدالت میں پیش کیا گیا ضیاء اللہ آفریدی پر 3ماہ میںمنرل پالیسی نہ بنا کر رولز 11 کی خلاف ورزی، محکمہ خزانہ کو بائی پاس کرنے اور غیرقانونی تقرریاں کرنے کا الزام لگایا گیا ہے جس سے قومی خزانہ کو 150 بلین روپے کا نقصان پہنچا۔