حکومت قومی معیشت اور تجارت کو بہتر بنانے کی کوشش کر رہی ہے: صدر ممنون

05 اگست 2015

اسلام آباد (ایجنسیاں)صدر مملکت ممنون حسین نے کہا ہے کہ حکومت بڑی محنت سے قومی معیشت اور تجارت کو بہتر بنانے کی کوشش کر رہی ہے۔ اس سلسلے میں حکومتی پالیسیاں درست سمت میں ہیں اور مثبت نتائج برآمد ہورہے ہیں۔ صدر مملکت نے یہ بات سیالکوٹ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے اچیومنٹ ایوارڈ کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی جو ایوانِ صدر میں منعقد ہوئی۔ صدر مملکت نے کہا کہ ترقیاتی منصوبوں کی تکمیل کے کام میں عوام بھی اپنا حصہ ڈالیں اور اس سلسلے میں کسی رکاوٹ کو برداشت نہ کریں کیونکہ ان ہی منصوبوں کی تکمیل سے ملک میں اقتصادی سرگرمیاں جنم لیں گی اور ملک کی معیشت مستحکم ہوگی۔ پورا ملک بدعنوانی کے خلاف متحد ہے۔ آبی ذخائر کی تعمیر وقت کی اہم ترین ضرورت ہے۔ حکومت بھاشا ڈیم اور دیامر ڈیم کی تعمیر سمیت دیگر آبی ذخائر بھی تعمیر کر رہی ہے،ا ان منصوبوں کی تکمیل کے لیے عوام سیسہ پلائی دیوار بن جائیں ۔صدر مملکت نے سیالکوٹ کے تاجروں اور صنعت کاروں کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ یہ امر میرے لیے باعثِ مسّرت ہے کہ اس شہر میں بینک نادہندگان نہ ہونے کے برابر ہیں ۔ یہ طرزِ عمل قابلِ تعریف ہے ملک کے دیگر طبقات کو سیالکوٹ کے تاجروں اور صنعت کاروں کی پیروی کرنی چاہیے۔وفاقی وزیر پانی و بجلی و دفاع خواجہ محمد آصف نے اس موقع پر کہا کہ آئندہ دو برسوں کے دوران ملک سے بجلی کی لوڈ شیڈنگ ختم ہوجائے گی۔ صدر مملکت نے اس موقع پر اعلیٰ کارکردگی کا مظاہرہ کرنیوالے تاجروں اور صنعت کاروں میں کارکردگی ایوارڈ تقسیم کیے۔صدر مملکت نے مزید کہا کہ غیر ملکی سرمایہ کار ملک میں سرمایہ کاری کرنے میں دلچسپی لے رہے ہیں ۔ پاک چین اقتصادی راہداری منصوبوں کی تکمیل سے لاکھوں لوگوں کو روزگار ملے گا ، حکومت نے 2018 ء تک تعلیم پر بجٹ کا 4 فیصد خرچ کرنے کا تہیہ کر رکھا ہے ۔ کسی بھی ملک کی معیشت مضبوط ہو تو اس ملک کی سیاست خو د بخود مضبوط ہوتی ہے ۔ حکومت نے تہیہ کر رکھا ہے کہ 2018ء تک سسٹم میں 8000 میگا واٹ سے زائد بجلی پیدا کرے گی ۔