عالمی مقابلے کل سے کراچی میں شروع، پاکستان سنوکر کی سرزمین ہے : میکسم کاسز

05 اگست 2015

لاہور+کراچی(نمائندہ سپورٹس+سپورٹس رپورٹر ) عالمی سکس ریڈ بال چیمپیئن شپ، عالمی ٹیم سنوکر چیمپئن شپ اور ماسٹرز ٹیم چیمپئن شپ کے مقابلے کل سے کراچی میں شروع ہونگے۔ مقابلوں میں پاکستان سمیت 18 ممالک حصہ لے رہے ہیں جن میں بھارت بھی شامل ہے ۔بھارت کے پنکج ایڈوانی ورلڈ سکس ریڈبال چیمپئن شپ کے دفاعی چیمپئن ہیں۔پاکستان بلیئرڈز اینڈ سنوکر ایسوسی ایشن کے صدر عالمگیر شیخ نے مقابلوں کے انعقاد کو پاکستان کی ایک بڑی کامیابی قرار دیتے ہوئے کہاہے کہ 24 ،25 ممالک کو دعوت نامے بھیجے گئے تھے لیکن 17 ممالک کا پاکستان آنا بھی کم اہم نہیں ہے، البتہ انھیں تھائی لینڈ کی غیرحاضری پر حیرانی ہوئی ہے جس کے کھلاڑی پاکستان میں ہر بڑے ایونٹ میں باقاعدگی سے حصہ لیتے رہے ہیں۔مقابلوں کے انعقاد سے پاکستان کے بارے میں دنیا کو مثبت پیغام ملے گا، ساتھ ہی پاکستانی کھلاڑیوں کے لیے اچھا موقع ہے کہ وہ ان مقابلوں میں حصہ لے کر اپنے تجربے میں اضافہ کریں گے۔پاکستان کے 26 کھلاڑی ان مقابلوں میں حصہ لے رہے ہیں۔ماضی کے کئی کھلاڑی ماسٹرز ایونٹ میں ایکشن میں نظر آئیں گے، ان میں سابق عالمی امیچر چیمپئن محمد یوسف بھی شامل ہیں۔انٹرنیشنل بلیئرڈز اینڈ سنوکر فیڈریشن کے نائب صدر میکسم کاسز بھی ان مقابلوں کے سلسلے میں کراچی آئے ہیں۔ان کا کہنا ہے کہ پاکستان سنوکر کی سرزمین ہے۔ اس نے دنیا کو دو عالمی چیمپئن محمد یوسف اور محمد آصف دیے ہیں اور دونوں ان مقابلوں میں شریک ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان وہ ملک ہے جو تواتر سے ایشیائی اور عالمی سطح کے مقابلوں کی میزبانی کرتا رہا ہے جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ پاکستان بلیئرڈز اینڈ سنوکر ایسوسی ایشن ملک میں اس کھیل کے فروغ کے لیے کافی کام کر رہی ہے۔میگا ایونٹس کے انعقاد سے پاکستان میں سنوکر کے کھیل کو فروغ ملے گا۔پاکستانی فیڈریشن اچھا کام کررہی ہے اور کھیل کے فروغ کیلئے معاونت کرتے رہیں گے ۔عالمگیر شیخ کا کہنا ہے کہ بین الصوبائی رابطے کی وزارت نے عالمی اور ایشیائی مقابلوں میں جیتنے والے محمد آصف محمد سجاد اور حمزہ اکبر کو سپورٹس پالیسی کے تحت ملنے والی انعامی رقم کی مکمل ادائیگی سے یکسر انکار کر دیا اور صاف کہہ دیا کہ جتنے پیسے دے دیے ہیں وہ لینے ہیں تو لے لیں۔

EXIT کی تلاش

خدا کو جان دینی ہے۔ جھوٹ لکھنے سے خوف آتا ہے۔ برملا یہ اعتراف کرنے میں لہٰذا ...