زرداری کا اب نہیں تو آگے چل کر حسا ب کتا ب ضرور ہو گا ، ممتا ز بھٹو

04 جنوری 2018

لاڑکانہ(بیورو رپورٹ) کھوڑو برادری کی جانب سے 4 ہاریوں کو قتل اور 4 کو زخمی کرنے کے واقعے پر پی ٹی آئی رہنما سردار ممتاز علی خان بھٹو سے ملک بھر کی نامور شخصیات نے ملاقات اور ٹیلیفون پر رابطہ کرکے ساتھ دینے کی پیشکش کی۔ ان سے گفتگو کرتے ہوئے سردار ممتاز علی خان بھٹو نے انہیں بتایا کہ مذکورہ زمین پر کھوڑوں کا پولیس کی مدد سے گذشتہ 4 سالوں سے قبضہ قائم ہے جس میں 7 ہاری اور 9 کھوڑے جان سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں، یہ سب کچھ حکومت کی جانب سے کھوڑوں کو مدد دینے کی وجہ سے ہوا ہے۔ کئی اور لوگوں سمیت میرے بیٹے امیر بخش اور میرے خلاف بھی قتل کے 5 مقدمات درج کیے گئے ہیں اور سب ضمانتوں پر ہیں جبکہ کھوڑوں کے خلاف پولیس نے درخواستیں نہیں لیں، اگر لیں تو سرد خانے میں ڈال دیں یا پھر کوئی کارروائی نہیں کی جھگڑے والی زمین محکمہ ریونیو سے خرید کرجنگل کاٹنے کے بعد زمین کو قابل کاشت بنایا گیا، پانی کے پمپ بھی لگائے گئے اور 12 لاکھ روپے خرچ کرکے واپڈا سے بجلی کی لائینیں لی گئیں جو تمام کھوڑوں نے تباہ کردی ہیں، ٹیوب ویلوں پر قبضہ کردیا ہے اور وہاں پر رکھا ہوا بیج، کھاد اور لاکھوں روپے کے دیگر سامان پر بھی قبضہ کردیا ہے، مطلب کہ یہ جو کچھ ہو رہا ہے وہ زرداری بھٹو دشمنی میں کروا رہے ہیں جس کا اب نہیں تو آگے چل کر حساب کتاب ضرور ہوگا، کیوں کہ تمام تر زیادتیوں کا ریکارڈ محفوظ ہے۔

ممتاز بھٹو