توہین عدالت کیس: سپریم کورٹ نے چیئرمین نیب کو وکیل کرنے کیلئے بارہ فروری تک مہلت دے دی۔

04 فروری 2013 (15:18)

چیف جسٹس کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے تین رکنی بینچ نے چیرمین نیب کے خلاف توہین عدالت کیس کی سماعت کی،،، سماعت کے آغاز پر چیرمین نیب فصیح بخاری نے عدالت سے وکیل کرنے اور نوٹس کا جواب دینے کے لیے مزید مہلت کی استدعا کی۔۔۔۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ ابھی تک وکیل نہیں کیا مزید کتنی مہلت دیں،،، انہوں نے چیرمین نیب سے استفسار کیا کہ سات دن کا وقت کافی ہوگا جس پر فصیح بخاری نےکہا کہ اس دوران وکیل کرنے کی کوشش کروں گا جس پر سپریم کورٹ نے مقدمے کی سماعت بارہ فروری تک ملتوی کردی،،، سماعت کے دوران پراسکیوٹرجنرل نیب کے کے آغا نے لارجر بینچ کی تشکیل کی درخواست کی ۔۔۔۔جسے سپریم کورٹ نے یہ کہہ کر مسترد کردیا کہ تین رکنی بینچ اس مقدمے کی سماعت کررہا ہے جبکہ دو رکنی بینچ دوسرے معاملات بھی دیکھ رہا ہے۔ سپریم کورٹ نے رینٹل پاور کیس میں صدر زرداری کو خط لکھنے پرچیرمین نیب کو توہین عدالت کا نوٹس جاری کیا تھا۔