ینگ ڈاکٹرز کا آج سے تادم مرگ بھوک ہڑتال کا اعلان

04 فروری 2013


لاہور (نیوزرپورٹر) ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن پنجاب نے ہسپتالوں میں ہڑتال و احتجاج ختم کرتے ہوئے اپنے مطالبات کی منظوری تک تادم مرگ بھوک ہڑتال کا اعلان کر دیا ہے اور اس سلسلہ میں آج سے سروسز ہسپتال کے باہر بھوک ہڑتالی کیمپ قائم کرنے کا اعلان کر دیا ہے۔ گزشتہ روز پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وائے ڈی اے پنجاب کے رہنماوں ڈاکٹر ناصر عباس، ڈاکٹر حامد بٹ، ڈاکٹر عثمان ایوب، ڈاکٹر بشارت، ڈاکٹر جاوید آہیر، ڈاکٹر اجمل سمیت دیگر نے پریس کانفرنس کی۔ اس موقع پر وائے ڈی اے پاکستان کے جنرل سیکرٹری ڈاکٹر سلمان کاظمی بھی انکے ہمراہ تھے۔ اس موقع پر رہنماﺅں نے کہا ہم نے تمام ہسپتالوں سے مریضوں کے علاج معالجہ کی بہتری کے لئے احتجاجی ہڑتالی کیمپ آج سے ختم کر دئیے ہیں اور ہسپتالوں میں مفت علاج معالجہ کی فراہمی، طبی آلات کی درستگی، معیاری ادویات کے ساتھ ساتھ سروس سٹرکچر اور انصاف کی فراہمی تک آج سے سروسز ہسپتال کے باہر احتجاجی کیمپ قائم کیا جائے گا جس میں صرف وائے ڈے اے کی جنرل کونسل اور سنٹر ل کمیٹی کے عہدیداران شرکت کریں گے جبکہ باقی تمام ہسپتالوں کے آٓوٹ ڈورز، ان ڈورز اور ایمرجنسی میں مریضوں کو علاج معالجہ کی سہولیات بھی فراہم کی جائیں گی اور کسی بھی ہسپتال میں احتجاجی کیمپ منعقد نہیں کیا جائے گا۔ ڈاکٹرز ایک ماہ سے زائد عرصہ سے جیل میں ہیں عدالتی احکامات کے باوجود ہماری جانب سے گوجرانوالہ سول لائن پولیس مقدمہ کا اندراج نہیں کر رہی انہوںنے کہا ہماری آگاہی کے باوجود خسرہ کے معاملہ پر توجہ نہیں دی گئی اور اس وقت پنجاب خسرہ کی وباءمیں مبتلا ہے۔ آئندہ سے ہڑتال نہیں کی جائے گی۔ انہوں نے کہا ہمارا بھوک ہڑتالی کیمپ پرامن ہوگا جو تادم مرگ جاری رہے گا لیکن اگر حکومت کی جانب سے اسے اکھاڑنے یا پرتشدد بنانے کی کوشش کی گئی تو پھر ہماری جانب سے امن کی کوئی ضمانت نہیں ہے پھر ہڑتال سمیت تمام معاملات کی ذمہ داری حکومت پر ہوگی۔