ڈرون حملے جاری رکھنے کی باتیں امریکہ کا کھلا اعلان جنگ ہے: حافظ سعید

04 فروری 2013


لاہور(خصوصی نامہ نگار) امیر جماعة الدعوة پاکستان پروفیسر حافظ محمد سعید نے کہا ہے کہ امریکہ کی طرف سے ڈرون حملے جاری رکھنے کی باتیں پاکستان کے خلا ف اعلان جنگ ہے ۔ حکمران امریکی دباﺅ پر خاموش رہنے کی بجائے ملکی سلامتی و خود مختاری کو مدنظر رکھتے ہوئے پالیسیاں ترتیب دیں۔ 5فروری کو پورے ملک میں کشمیر کارواں، جلسوں اور کانفرنسوں کا انعقاد کیا جائے گا۔ دفاع پاکستان کونسل کے زیر اہتمام نیلا گنبد سے مسجد شہداءمال روڈ تک کشمیر کارواں یوم یکجہتی کشمیر کے موقع پر سب سے بڑا پروگرام ہو گا۔ پاکستانی قوم کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے حوالہ سے منعقدہ پروگراموں میں بھرپور انداز میں شریک ہو کر غیرت ایمانی کا ثبوت دے۔ گذشتہ روز جماعةالدعوة کے کارکنان و ذمہ داران کے مختلف وفود سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ حکمران کشمیری و پاکستان قوم کے مفادات کو مد نظر رکھتے ہوئے پالیسیاں ترتیب دیں اور مضبوط کشمیر پالیسی وضع کی جائے تاکہ مظلوم کشمیری بھائیوں کی ہر ممکن مدد کی جا سکے۔ عالمی برادری کو مقبوضہ کشمیر میں بھارتی ریاستی دہشت گردی سے آگاہ کرنے کےلئے پوری دنیا میں موجود اپنے سفارت خانوں کو متحرک کیا جائے۔ حکمران نام نہاد دہشت گردی کے خلاف جنگ کے سلسلہ میں قائم امریکی اتحاد سے باہر نکل آئیں اور کشمیریوں کے اصل وکیل ہونے کا کردار ادا کریں۔ انہوںنے کہاکہ اتحادی ممالک تمامتر وسائل اور ٹیکنالوجی کے باوجود افغانستان میں نہیں ٹھہر سکتے تو بھارت بھی مقبوضہ کشمیر پر اپنا غاصبانہ قبضہ برقرار نہیں رکھ سکے گا۔ یہ وہ حقیقت ہے جو پاکستان کے استحکام کی بنیاد ہے ۔ اس وقت اگر انڈیا کو کھل کھیلنے کا موقع دیا گیا اور ہم نے حقائق کا ادراک نہ کیا تو کہیں ایسا نہ ہو کہ غاصب بھارت کو اپنے بھیانک منصوبے پورے کرنے کا موقع مل جائے۔ انہوںنے کہا کہ پاکستان میں بیٹھے بھارتی لابی کے لوگ انڈیا اور امریکہ کی خوشنودی کے لیے بھارت سے دوستی اور ویزا سروس میں نرمی کی باتیں کر رہے ہیں۔ جب سے امن کی آشا کا سلسلہ شروع ہوا ہے بلوچستان، سندھ اور خیبر پی کے میں ٹارگٹ کلنگ اور دہشت گردی پروان چڑھی ہے ۔