میو ہسپتال کے سوا صوبے کے کسی ہسپتال میں منہ اور جبڑے کی سرجری کا شعبہ موجود نہیں

04 فروری 2013

لاہور (نیوز رپورٹر) وزیر اعلی پنجاب کے واضح احکامات کے باوجود محکمہ صحت صوبے بھر کے تمام سرکاری ہسپتالوںمیں مریضوں کو صحت کی مکمل سہولتوںکی فراہمی میں عملا ناکام نظر آتاہے۔ میو ہسپتال کے سوا لاہور سمیت صوبے کے تمام سرکاری ہسپتالوں میں منہ اور جبڑے کی سرجری ڈیپارٹمنٹ ہی موجود نہیں ہیں۔ لاہور کا واحد میڈیکل ڈینٹل کالج میں بھی یہ شعبہ موجود نہیں ۔ لاہور کے تمام ہسپتالوں سے مریضوں کو میو ہسپتال بجھوا دیتے ہیں۔ صوبے کے تمام ہسپتالوں میں روزانہ 3400 مریض ٹریفک حادثات کا شکار ہو کر ہسپتالوں میں آتے ہیں۔ جس میں منہ اور جبڑے کی سرجری کے مریضوں کی تعداد 400 کے قریب ہے۔ منہ اور جبڑے کی سرجری کی خاص ٹکنیشن اور سرجن کی ضرورت ہوتی ہے۔ لاہور میں میڈیکل ڈینٹل کالج میں منہ اور سرجری کا ڈیپارٹمنٹ موجود نہیں جبکہ سرجن موجود ہے۔ اس کی سرجری کے لئے او پی جی ایکسرے (opg x ray) کی سہولت بھی صرف ڈینٹل ہسپتال میں موجود ہ ہے۔ باقی ہسپتالوں میں ایکسرے کی سہولت بھی نہیں ہے۔ان حادثات کا شکار ہوکر آنے والے مریض مختلف ہسپتالوں میںخوار ہوتے رہتے ہیں۔