نارنگ منڈی:واٹر سپلائی پائپ بوسیدہ ہو گئے، شہری مضر صحت پانی پینے پر مجبور

04 فروری 2013


نارنگ منڈی (نامہ نگار) اندرون شہر واٹر سپلائی پائپ 60 سال پرانے ہونے کی وجہ سے جگہ جگہ سے پھٹ چکے ہیں اور پورا شہر گٹر ملا گندا اور آلودہ مضر صحت پانی پینے پر مجبور ہیں، جس کے باعث یہاں گزشتہ 3 ماہ کے دوران ہیپاٹائٹس کے جان لیوا مرض میں مبتلا 5 افراد جاں بحق ہوچکے ہیں۔ بتایا جاتا ہے کہ بلدیہ کے زیرنگرانی واٹر سپلائی پائپ 3 نسلیں پروان چڑھنے کے باوجود بھی تبدیل نہیں کئے گئے، جس کا نتیجہ یہ ہے کہ ہر گلی محلہ میں سیاہی مائل گندا اور غلیظ پانی لوگوں کے گھروں میں آرہا ہے، جس سے پیٹ کے امراض میں اضافہ ہو رہا ہے اور ہر تیسرا فرد کالے یرقان میں مبتلا ہے۔ انتظامیہ کے مطابق واٹر سپلائی سکیم پر ایک کروڑ روپے سے زیادہ لاگت آتی ہے، جس کی وجہ سے یہ منصوبہ تاخیر کا شکار ہے۔ شہری حلقوں نے وزیراعلیٰ پنجاب سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔