مسلم لیگ ن‘ اپوزیشن کا پارلیمنٹ ہاﺅس سے سامنے دھرنا اور احتجاجی مارچ آج ہوگا

04 فروری 2013

اسلام آباد(آن لائن+ ثناءنیوز) مسلم لیگ (ن) راجہ ظفرالحق اور قائد حزب اختلاف چودھری نثار علی خان کی قیادت میں آج دوپہر 12 بجے قومی اسمبلی کے باہر الیکشن کمشن کو مزید بااختیار بنانے، کراچی میں نئی حلقہ بندیاں اور گھر گھر ووٹرز کی تصدیق کا عمل شفاف بنانے کیلئے احتجاجی دھرنا دےگی۔ جماعت اسلامی، فنکشنل لیگ اور عوامی تحریک سندھ نے بھی دھرنے میں شرکت کا اعلان کردیا ہے۔ چودھری نثار علی خان نے مسلم لیگ (ن) سے تعلق رکھنے والے ارکان سینٹ و قومی اسمبلی کو دھرنے میں اپنی شرکت یقینی بنانے کی ہدایت کی ہے جبکہ مسلم لیگ آزاد کشمیر کے ارکان کشمیر کونسل، اسمبلی، مرکزی عہدیداران اور کارکنان نے بھی دھرنے میں شرکت کا اعلان کیا ہے جبکہ جموں و کشمیر پیپلزپارٹی نے بھی سردار خالد ابراہیم کی زیر قیادت اجلاس میں مسلم لیگ (ن) کے دھرنے میں شمولیت کا فیصلہ کیا ہے۔ الیکشن کمشن و سپریم کورٹ سے اظہار یکجہتی کیلئے شاہراہ دستور پر ان قومی اداروں تک مارچ بھی کیا جائےگا۔ دھرنے سے قبل پاکستان مسلم لیگ (ن) کی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس بھی ہو گا۔ صاف شفاف غیرجانبدارانہ و منصفانہ انتخابات کے انعقاد کیلئے الیکشن کمشن آف پاکستان کو متحدہ اپوزیشن کی جانب سے چارٹر آف ڈیمانڈ پر مبنی یادداشت بھی پیش کی جائےگی ۔ اس ضمن میں اپوزیشن جماعتوں کے قائدین کی چیف الیکشن کمشنر جسٹس (ر) فخر الدین جی ابراہیم سے ملاقات متوقع ہے ۔ اپوزیشن جماعتیں انتخابی تاریخ کے اعلان کے ساتھ ہی نگران حکومت کی جانب سے ملکی نظم ونسق سنبھالنے کے فوری بعد سیاسی بنیادوں پر تعینات گورنرز ہٹانے کا مطالبہ کررہی ہیںاس طرح انتخابی عمل پر اثر انداز ہونے کے پیش نظر چیف سیکرٹریز، داخلہ وپولیس کے وفاقی وصوبائی سربراہوں وفاق اور صوبوں کی سطح پر انتظامیہ پولیس کے دیگر اعلٰی افسران سمیت اہم سرکاری اداروں کے افسران کی اکھار پچھاڑ کا مطالبہ بھی کیا جا رہا ہے ۔ مشترکہ یادداشت میں بھی ان مطالبات کا اعادہ کیا جائےگا۔ دھرنا اور اس مارچ میں مسلم لیگ(ن) ، جماعت اسلامی ، مسلم لیگ( فنکشنل ) ،پختونخوا ملی عوامی پارٹی ، سندھ بلوچستان کی اپوزیشن کی دیگر قوم پرست جماعتوں کے رہنما شریک ہوں گے۔ جڑواں شہروں سے عوامی ریلیاں بھی دھرنا کیلئے شاہراہ دستور پر آئیں گی ۔آن لائن کے مطابق پاکستان سُنی تحریک کے مرکزی رہنما محمد شاہد غوری، محمد شاداب رضا نقشبندی اور محمد زاہد حبیب قادری کی قیادت میں سُنی تحریک کا ایک بڑا قافلہ مسلم لیگ (ن) کے احتجاجی دھرنے میں شرکت کرے گا۔