نیپال کے سابق ماﺅ باغیوں نے گوریلا جنگ سے ہمیشہ کیلئے دستبرداری کی پیشکش کر دی

04 فروری 2013


ہٹادوا(اے پی پی) نیپال کے ماﺅ باغیوں نے گوریلا جنگ سے ہمیشہ کیلئے دستبرداری اور اپنی لیڈر شپ کو آزاد نیپالی وزیر اعظم کے سپرد کرنے کی پیشکش کر دی ۔ نیپال کے سابق ماﺅ تنظیم کا ہٹادوا میں جنرل کنونشن کا اجلاس ہوا جس میں ماﺅ رہنماوﺅں نے کہاکہ وہ نیپال میں شوشلسٹ انقلاب لانے کیلئے حکومت سے دستبردار ہونے کو تیار ہیں۔ انہوں نے کہاکہ حکومت کو چلانے کیلئے ہم آزاد وزیر اعظم لانے کے حق میں ہیں اور ہم چاہتےہیں کہ اگر آزاد وزیر اعظم آ جائے تو ہم اپنی لیڈر شپ ان کو منتقل کر کے گوریلا جنگ سے ہمیشہ کیلئے دستبردار ہو جائیں گے۔ کنونشن میں 3ہزار وفود اور ایک لاکھ کارکنوں نے شرکت کی جس کی صدارت ماﺅ رہنما چیئرمین پشپا کمل دہل نے کی ۔ ماﺅ تنظیم کا کنونشن 21سال کے وقفے کے بعد منعقد کیاگیاہے ۔ پشپا دہل نے اس موقع پر کہاکہ ان کو مزاحمت تحریک شروع کرنے پر مجبور کر دیا گیا تھا۔