ضابطہ اخلاق آئین کا حصہ بنائے بغیر منصفانہ انتخابات کا خواب شرمندہ تعبیر نہیں ہو سکے گا

04 فروری 2013

اسلام آباد (راجہ عابد پرویز/خبرنگار) ضابطہ اخلاق کو آئین کا حصہ بنائے بغےرالیکشن 2013ءکو فری اینڈ فیئر کرانے کا خواب شرمندہ تعبیر نہیں ہوسکے گا ۔ موجودہ ضابطہ اخلاق مےں الےکشن کمشن قوانےن کے تحت الےکشن کمشن کے پاس خلاف ورزی کرنے والے کسی امےدوار کو سزا دےنے کا اختےار نہےں۔ الےکشن کمشن نے آنے والے انتخابات کو صحےح معنوں مےں صاف اور شفاف بنانے کے لئے متعدد تجاوےز پر مشتمل انتخابی اصلاحات حکومت کوارسال کی ہےں۔ تجاوےز کو قانونی حےثےت ملنے سے الےکشن کمشن کو اےسے اختےار حاصل ہوسکےں گے جس سے وہ کسی بھی غےر قانونی اور بے ضابطگی پر سزائےں دےنے کے قابل ہوسکے گا ۔