ذرا سوچئے!

04 فروری 2013


مکرمی!اس بات میں کو ئی شک نہیں کہ ہماری قوم دنیا کی بہترین قوموں میں شمار ہوتی ہے جہاں سب سے زیادہ تعداد نوجوانوں کی ہے۔لیکن!افسوس کہ گھروں،تعلیمی اداروں اور(معذرت کے ساتھ)مسجدوں میں ہماری نوجوان نسل کو صحیح اخلاقی تربیت فراہم کی ہی نہیں جارہی ۔جس کی وجہ ان میں فرسٹریشن اور ڈپریشن کا مرض مزید بڑھتا جا رہا ہے اور جس کا کوئی سد باب نہیں کیا جا رہا ۔میں سمجھتا ہوں کہ اگر وطن عزیز کی نو جوان نسل صحیح سمت دے دی جائے توپھر دیکھئے ہم کامیابی کی منزلوں کو کس طرح چھوتے ہیں۔ اس حوالے سے دانشوروں کو اپنا کردار ادا کرنا چاہیے ۔(حا فظ ذوہیب طیب لاہور)

مری بکل دے وچ چور ....

فاضل چیف جسٹس کے گذشتہ روز کے ریمارکس معنی خیز ہیں۔ کیا توہین عدالت کا مرتکب ...

ذرا سوچیے …!

ہمارے گرد و نواح میں روزانہ معمولات زندگی میں اکثر کچھ ایسے واقعات رونما ...