سرکاری ہسپتالوں کے معیار کو بہتر بنانے کی ضرورت

03 ستمبر 2010
مکرمی! ہمارے ملک پاکستان میں سرکاری ہسپتالوں کی کمی کا مسئلہ ایک طرف ہے مگر دوسری طرف ان ہسپتالوںکی موجودہ حالت نہایت پسماندہ ہے اس صورت حال کے پیش نظر لوگوں کو بہت سی مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے ہسپتالوں میں مریضوں کی تعداد بہت زیادہ ہے اوراس تعداد کے لحاظ سے مریضوں کیلئے سہولیات کم ہوئی ہیں سرکاری ہسپتالوں میں بیڈوں کی کمی کا مسئلہ اپنے عروج پر ہے ایک ایک بیڈ پر دو یا تین مریض ہوتے ہیں۔ جس کی وجہ سے مریضوں کا علاج وقت پر نہیں کیا جاتا۔ سرکاری ہسپتالوں میں بیت الخلاءکا نظام بھی بہت ناکارہ ہوتا ہے مرد اور عورتیں ایک ہی بیت الخلاءاستعمال کرتے ہیں۔ ان بیت الخلاءکی صفائی کا خیال بھی نہیں رکھا جاتا سرکاری ہسپتالوںمیںبلڈ بینکس میں موجودہ خون مریضوںکی بڑی تعداد کیلئے ناکافی ہوتا ہے جس کی وجہ سے مریض کو بروقت خون میسر نہیں ہوتا اوروہ اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھتا ہے۔لہٰذا یہ حکومت کی ذمہ داری ہے کہ وہ ان سرکاری ہسپتالوں کامعیار بہتر کریں۔(ارم طیبہ سردارشعبہ ابلاغیات کوئین میری کالج لاہور)