ترک عوام پاکستانیوں کے ساتھ ہیں : امینہ اردگان ۔۔ پاکستانی معیشت پہلے ہی بدحال تھی‘ باقی کسر سیلاب نے پوری کردی : وزیراعظم گیلانی

03 ستمبر 2010
نوشہرہ (ایجنسیاں) وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی نے کہا ہے کہ پاکستان کی معیشت دہشت گردی کے باعث پہلے ہی زبوں حالی کا شکار تھی ، رہی سہی کسر حالیہ سیلاب نے پوری کر دی، ابتدائی اندازے کے مطابق سیلاب سے ہونے والا نقصان جی ڈی پی کا دو فیصد ہے، سیلاب ابھی ختم نہیں ہوا، مشکل مرحلہ باقی ہے، انفراسٹرکچر کی تعمیر اور متاثرین کی بحالی اور اربوں روپے خرچ ہو گئے۔ ترکی کی خاتون اول امینہ اردگان نے کہا کہ ترکی دس ہزار سیلاب متاثرین کے لئے امداد فراہم کرے گا، نوشہرہ کے متاثرین کو 28 سو عارضی گھر فراہم کئے جائیں گے، پاکستان اور ترکی ایک ہاتھ کی انگلیوں کی طرح ہیں جن میں زمینی فاصلہ تو ہے مگر ایک دوسرے سے الگ نہیں، ہم پاکستانی عوام کے دکھ درد کو اچھی طرح سمجھتے ہیں اور ان کے لئے کردار ادا کریں گے۔ یہ بات انہوں نے نوشہرہ کے نواحی علاقہ پیر سابق میں قائم کیمپ میں ترکی کی ریڈ کریسنٹ سوسائٹی اور ترکی کے قومی اخبار حریت کی جانب سے دیئے جانے والے 120 عارضی گھروں کی چابیاں متاثرین کے حوالے کرنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ اس موقع پر بیگم فوزیہ گیلانی کے علاوہ ترکی کی وزیر برائے امور خواتین بھی موجود تھیں‘ وزیراعظم گیلانی نے کہا کہ پاکستان میں آنے والا سیلاب تباہی کے حساب سے 2005ءکے زلزلہ اور سونامی سے بھی زیادہ ہے، حکومت صورت حال نارمل ہونے تک متاثرین کی مدد جاری رکھے گی تاہم اس کے لئے ہمیں عالمی برادری کے تعاون کی اشد ضرورت ہے، اس سانحہ سے ملکی آبادی کا ہر آٹھواں شخص متاثر ہوا ہے‘ 20 فیصد رقبہ سیلاب کی زد میں ہونے کے علاوہ لاکھوں گھر اور انفراسٹرکچر تباہ ہو گیا، سب سے زیادہ نقصان زراعت اور لائیو سٹاک کے شعبہ میں ہوا، نقصانات کا ابتدائی اندازہ ملکی جی ڈی پی کا دو فیصد ہے۔ امینہ اردگان نے کہا کہ ہم پاکستانی عوام کے دکھ میں برابر کے شریک ہیں‘ 1920ءسے ہمارے دکھ درد سانجھے ہیں ترکی کی تحریک میں اس خطہ کے مسلمانوں نے ہماری بھر پور مدد کی تھی ۔ آزادی کی تحریک کے علاوہ پاکستان نے 1990ءمیں ترکی میں آنے والے زلزلہ میں جو کردار ادا کیا وہ ہم بھلا نہیں سکتے۔ سیلاب نے جو تباہی پھیلائی ہے اس سے نمٹنے کے لئے ترکی پاکستان کا کیس عالمی برادری میں اٹھائے گا۔ ترکی کے لوگ پاکستانی بھائی بہنوں کا دکھ درد سمجھتے ہیں اور وہ اس مشکل وقت میں ان کے ساتھ ہیں‘ ترکی سیلاب سے متاثرین کو گھروں کی تعمیر اور ان کی زندگی کی ضرورتیں پوری کرنے میں ہرممکن تعاون کرے گا۔ استنبول میں ہونے والے ایک چیریٹی ڈنر میں سیلاب متاثرین کے لئے فنڈز اکٹھے کئے گئے۔ بیگم امینہ اردگان اور ترکی کی بزنس خواتین یہ عطیات دینے کے لئے اس وقت پاکستان آئی ہیں۔ امینہ اردگان نے سپیکر قومی اسمبلی ڈاکٹر فہمیدہ مرزا سے ملاقات کی۔ اس موقع پر انہوں نے کہا کہ ترک عوام مشکل کی اس گھڑی میں پاکستانی عوام کے ساتھ ہیں اور ترک حکومت پاکستانی عوام کا ہرممکن تعاون اور مدد کرے گی۔ ڈاکٹر فہمیدہ مرزا نے کہا کہ پاکستان ترکی کے ساتھ اپنے دوستانہ اور برادرانہ تعلقات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہے جس نے ہمیشہ مشکل وقت میں پاکستان کی مدد کی۔