سیلاب سے نمٹنے کیلئے آئی ایم ایف کی طرف سے 45 کروڑ ڈالر کی ہنگامی امداد ۔۔ قرض پر سود نہیں لیں گے : صدر عالمی بنک

03 ستمبر 2010
اسلام آباد (نمائندہ خصوصی + ریڈیو + مانیٹرنگ ڈیسک) آئی ایم ایف نے اعلان کیا ہے کہ پاکستان کو 450 ملین ڈالر (45 کروڑ ڈالر ) کی فوری ہنگامی امداد فراہم کی جائے گی۔ اس امداد کا مقصد شدید سیلاب کی تباہ کاریوں سے نمٹنے کے لئے پاکستان کی مدد کرنا ہے۔ آئی ایم ایف کے ایم ڈی ڈومینیک سٹراس نے کہا ہے کہ پاکستان میں سیلاب ایک انسانی المیہ ہے جس سے کروڑوں افراد متاثر ہوئے ہیں۔ ملک کا انفراسٹرکچر متاثر ہوا ہے‘ یہ امداد ماہ رواں میں پاکستان کو فراہم کردی جائے گی۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان کے ساتھ سٹینڈ بائی ارینجمنٹ کے تحت بات چیت جاری ہے اور پاکستانی حکام نے کہا ہے کہ اس پروگرام کے تحت اقدامات اٹھائے جائیں گے۔ آئی ایم ایف کے ایم ڈی سے وزیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ نے ملاقات کی۔ وزیر خزانہ نے ملاقات کے بعد کہا پاکستان اصلاحات کے لئے باعزم ہے۔ 450 ملین ڈالر کی یہ امداد قدرتی آفات کے فنڈ سے دی جائے گی اور یہ بجٹ سپورٹ کے تحت ہوگی۔ دریں اثناءعالمی بنک نے سیلاب زدگان کےلئے امداد 900 ملین ڈالر سے بڑھا کر ایک ارب ڈالر کرنے کے معاملے سے وزیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ کو باضابطہ طور پر آگاہ کر دیا ہے۔ صدر ورلڈ بنک رابرٹ زوٹیلک نے وزیر خزانہ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ڈونرز کا اعتماد بحال کرنے کےلئے پاکستان مےں معاشی، ادارتی اور حکومتی اصلاحات اہم ہےں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کےلئے پہلے سے مخصوص کی جانےوالی رقم بھی سیلاب زدگان کے فنڈ کی مد مےں دی جائے گی۔