فوج اور طالبان بندوق رکھ کر مسائل بات چیت سے حل کریں: ساجد میر

03 مئی 2014

لاہور (خصوصی نامہ نگار)مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستان کے سربراہ سینیٹر پروفیسر ساجد میرنے کہا ہے کہ ملک میں غداری کے فتووں کی مشینیں لگی ہوئی ہیں،قومی مفاد کی بھی من مانی تعریفیں کی جارہی ہیں۔ جس سے ہیجان پیدا ہورہا ہے، یہ طرز عمل نیک شگون نہیں ہے، یہاں کوئی فرشتہ نہیں ہے ، ملکی استحکام کے لیے سب کو اپنی اپنی غلطیاں تسلیم کرنا ہو ں گی۔سب کو آئین تسلیم کرنا ہو گا۔ حکومت اور طالبان کمیٹیوں کے مذاکرات نتیجہ خیز اور بامقصد بنانے کے لئے فوجی اسٹیبلشمنٹ کو اس میں شامل کیا جائے۔ مذاکرات کی حمایت نہ کرنے والے ملک کے وفادار نہیں ہیں۔ انہوں نے فوج اور طالبان دونوں سے اپیل کی کہ وہ خدا کے لئے بندوق رکھ دیں اور مذاکرات سے معاملے کا حل نکالیں۔