حکومت خود کو عقل کل نہ سمجھے، مذاکرات پر پارلیمنٹ، اپوزیشن کو اعتماد میں لے: خورشید شاہ

03 مئی 2014

سکھر (آئی این پی) قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف سید خورشید شاہ نے کہا ہے کہ حکومت خود کو عقل کل نہ سمجھے، مذاکرات کے حوالے سے اپوزیشن اور پارلیمنٹ کو اعتماد میں لے، اس سے اس کو فا ئدہ ہو گا نقصان نہیں کیو نکہ اگر کل کلان کو ئی بات ہو گئی تو پھر سارا ملبہ اس پر گرے گا پتہ نہیں، حکو مت اس با رے میں کیوں بھاگ رہی ہے۔وہ جمعہ کو یہاں  میڈیا سے گفتگو کررہے تھے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہم نے اپنے پا نچ سالوں میں تو ہر مو قع اور وقت پر اپو زیشن اور پا رلیمنٹ کو اعتماد میں لیے رکھا اور یہی وجہ تھی کہ پا رلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس کرائے اور ان کیمرا بر یفنگز ہو ئیں انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم احتجاج کر نے اور ٹا ئر جلا نے کے بجا ئے سندھ کے گو رنر اور وزیر اعلیٰ سے مل بیٹھ کر مسئلے کو حل کر ے وہ اب حکو مت میں ہے اس لیے اسے اب احتجاج زیب نہیں دیتا انہوں نے مزید کہا کہ میں تو پہلے دن سے کہہ رہا ہوں اور کہتا آرہاہوں کہ اپو زیشن اور پا رلیمنٹ کو اعتماد میں لیا جا ئے مگر پتہ نہیں یہ کیوں بھاگ رہے ہیں ان کا کہنا تھا کہ کرا چی آپریشن کا فی حد تک کا میاب ہوا ہے جس سے لو گ مستفید ہو رہے ہیں انہوں نے حکو مت کی جانب  سے معیشت کی بہتری کے لیے کیے جا نے والے دعوے پر طنز کر تے ہو ئے کہا کہ ملک کی معیشت بھی بہتر ہو گئی ہے لو ڈ شیڈنگ بھی ختم ہو گئی ہے امن وامان کی صو رتحال بھی بہتر ہو گئی ہے کراچی میں جو کچھ ہو رہا ہے یہ آپریشن کی آڑ میں بھی ہو سکتا ہے۔