خونیں بھیڑیئے کراچی میں ہمارے کارکنوں کا شکار کر رہے ہیں: الطاف

03 مئی 2014

کراچی (آئی این پی) ایم کیو ایم کے قائد الطاف حسین نے کہا ہے کہ شہر میں خونی بھیڑیئے ماورائے عدالت قتل کی شکل میں ایم کیو ایم کے بے گناہ کارکنوں کا شکار کر رہے ہیں۔ ایم کیو ایم کے مرکز نائن زیرو پر رابطہ کمیٹی اور حیدرآباد، سکھر، میرپور خاص اور ٹنڈوالہ یار زون میں زونل کمیٹیوں کے ارکان سے ٹیلی پر گفتگو کرتے ہوئے الطاف حسین نے کہا کہ خونی بھیڑیئے درندوں کی طرح بے گناہ کارکنوں کی بوٹیاں کھا کرہڈیاں سڑکوں اور ویرانوں میں پھینک رہے ہیں، یہ سراسر ظلم اور بربریت ہے اور جو لوگ بھی یہ بربریت کررہے ہیں ان پر اللہ کاعذاب نازل ہو گا۔ الطاف حسین کا کہنا تھا کہ ملک میں سفاک انتہا پسند دہشت گرد فوج، ایف سی اور پولیس کے افسروں اورجوانوں کے گلے کاٹ رہے ہیں، ان پر حملے کر رہے ہیں لیکن ان دہشت گردوں کے خلاف کارروائی کرنے کے بجائے کراچی میں ایم کیوایم کے بے گناہ کارکنوں کا ماورائے عدالت قتل کیا جا رہا ہے۔ کارکنوں کو گرفتار کرکے حراست کے دوران انسانیت سوز تشدد کا نشانہ بنایا جا رہا ہے اور قتل کرکے ان کی مسخ شدہ نعشیں پھینکی جا رہی ہیں۔ الطاف حسین نے کہا کہ جولوگ بھی یہ ظلم کر رہے ہیں انہیں یہ یاد رکھنا چاہئے کہ اللہ کے ہاں دیر ہے اندھیر نہیں، اگریہ ظلم بند نہیں ہوا تو ماورائے عدالت قتل کر نے والوں کو مظلوموں کی بددعائیں لگیں گی اور صرف انہی پر نہیں بلکہ ان کے محکموں کے بڑوں پر بھی اس ظلم پر عذاب الہٰی آئے گا۔