سعودی کمپنیوں سے کھانا خریدنے کی شرط ختم نہ ہوئی تو فی حاجی 700ریال حکومت دیگی

03 مئی 2014

اسلام آباد (این این آئی) وفاقی وزیر مذہبی امور سردار محمد یوسف نے کہا ہے کہ سعودی حکام نے پاکستانی حاجیوں کے لئے سعودی کمپنیز سے کھاناخریدنے کی شرط ختم نہ کی تو فی حاجی تقریباً 700اضافی ریال حکومت پاکستان ادا کرے گی، سرکاری حج سکیم کے کامیاب درخواست گزاروں کا فیصلہ 15 مئی تک کر لیں گے، جنہوں نے پہلے فارم داخل کیا ہے وہ پہلے جائیں گے اور یہ پراسس صاف شفاف طریقے سے ہورہا ہے، کامیاب نہ ہونے والے درخواست دہندگان کو رقوم کی ادائیگی جلد شروع کردی جائے گی، عازمین حج کے لیے عمارتوں کا حصول جاری ہے، رواں برس کے حج اخراجات گزشتہ برسوں سے 33سے 43ہزار روپے کم ہیں، کوشش ہوگی کہ حاجیوں کو کچھ رقم واپس بھی کردی جائے،وفاقی وزیر مذہبی امور نے اسلام آباد ایئر پورٹ پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہاکہ سرکاری حج سکیم کے تحت 56ہزار عازمین کو پاکستان سے سعودی عرب جانا ہے مگر ایک ہی روزمیں 1لاکھ27 ہزار درخواستیں موصول ہوئیں، پہلے آئیے پہلے پائیے کی بنیاد پر کامیاب عازمین حج کا فیصلہ 15 مئی تک کردیں گے، جنہوں نے پہلے فارم داخل کیا ہے وہ پہلے جائیں گے اور یہ پراسس صاف شفاف طریقے سے ہورہا ہے، سردار یوسف کا کہنا تھا کہ کامیاب نہ ہونے والے درخواست دہندگان کو رقوم کی ادائیگی جلد شروع کردی جائے گی، پاکستانی حاجیوں کے لئے سعودی کمپنیز سے کھانا خریدنے کی پابندی کے معاملے پر سعودی حکام سے بات جاری ہے پابندی ختم نہ کی گئی تو حاجیوں سے اضافی تقریباً 7سو ریال وصول نہیں کیے جائیں گے، پاکستانی حکومت یہ رقم ادا کرے گی۔

EXIT کی تلاش

خدا کو جان دینی ہے۔ جھوٹ لکھنے سے خوف آتا ہے۔ برملا یہ اعتراف کرنے میں لہٰذا ...