شدت پسند چینی ورکرز سمیت اہم شخصیات کو اغوا کر سکتے ہیں: حساس اداروں کی رپورٹ

03 مئی 2014

اسلام آباد (ثناء نیوز) حساس اداروں نے خفیہ اطلاعات کی بنا پر دریائے سندھ  کے کناروں کی نگرانی کا عمل شروع کر دیا ہے۔ حکام نے خفیہ رپورٹ میں خدشہ ظاہر کیا ہے کہ کالعدم عسکریت پسند گروپ اسلحہ، گولہ بارود اور مغوی افراد کو صوبہ خیبر پی کے پنجاب اور سندھ منتقل کرنے کے لئے دریائے سندھ کا استعمال کر سکتے ہیں۔ انٹیلی جنس ایجنسیوں، وزارت داخلہ اور کیپٹل پولیس کے حکام نے نجی ٹی وی کو بتایا کہ کالعدم القاعدہ اور تحریک طالبان پاکستان موٹر وے اور نیشنل ہائی وے پر تلاشی سے بچنے کے لئے پانی کے راستے کا انتخاب کر سکتے ہیں۔ رپورٹس میں الرٹ کیا گیا ہے کہ کالعدم شدت پسند تنظیم القاعدہ اور تحریک طالبان خاص طور پر چشمہ اور میانوالی کے مقامات پر پاکستان اٹامک انرجی کمشن پر کام کرنے والے چینی ورکرز سمیت اہم شخصیات کو اغوا کرنے کی منصوبہ بندی کر رہی ہیں۔