کرزئی نے منموہن کو افغانستان آنے سے روک دیا: بھارتی ذرائع ابلاغ

03 مئی 2011
کراچی (خصوصی رپورٹ) بھارتی ذرائع ابلاغ نے اعتراف کیا ہے کہ پاکستان کی قیادت سے اپنی حالیہ ملاقاتوں کے فوری بعد افغان صدر حامد کرزئی نے بھارتی وزیراعظم منموہن سنگھ کے دورہ افغانستان کو موزوں خیال نہیں کیا اور انہیں افغانستان آنے سے روک دیا ۔ ایک خصوصی رپورٹ میں ذرائع کے حوالے سے کہا گیا ہے کہ افغان صدر کی پاکستان کیساتھ حالیہ قربت میں اضافہ افغانستان میں بھارتی کردار کی راہ میں رکاوٹ بن سکتی ہے تاہم بھارت کی کوشش رہے گی کہ وہ افغانستان میں کسی نہ کسی صورت اپنی موجودگی کو یقینی بنانے کیلئے ماضی میں سوویت یونین اور اب امریکی کندھے استعمال کرنے کی کوشش میں ہے۔ پاکستانی ماہرین مواحد حسین‘ حمید گل‘ عبدالقادر بلوچ و دیگر کا کہنا ہے کہ امریکی کسی طرح بھی بھارت کو افغانستان میں کوئی کردار نہیں دلا سکتے۔ ذرائع کے مطابق منموہن کے دورے کا التوا بھارت کیلئے ایک دھچکے سے کم نہیں ہے۔ اس حوالے سے بھارت کے سابق سیکرٹری خارجہ سلمان حیدر کا کہنا ہے کہ بھارت کی کوشش ہے کہ کسی نہ کسی طرح اسے افغانستان کی تعمیر و ترقی میں کردار کا موقع مل جائے لیکن پاکستان کے بغیر افغانستان میں امریکہ کی مدد سے بھارتی رول ممکن نہیں ہے جبکہ بین الاقوامی امور کے ماہر مواحد حسین نے اس حوالے سے کہا ہے کہ بدقسمتی سے ہمارے حکمران افغانستان میں بھارت کی موجودگی سے پیدا ہونیوالے سکیورٹی مسائل پر امریکہ سے مو¿ثر طریقے سے بات ہی نہیں کرتے جبکہ آئی ایس آئی کے سابق سربراہ جنرل (ر) حمید گل نے کہا ہے کہ امریکہ افغانستان میں جنگ ہار چکا ہے اور اس کی بھارت کو دلائی گئی یقین دہانیوں ”کہ اس کا افغانستان میں پاکستان جیسا ہی کردار ہوگا“ پر کیونکر عملدرآمد ہو سکتا ہے۔ مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنما و سابق گورنر بلوچستان عبدالقادر بلوچ نے کہا ہے کہ امریکہ کو افغانستان میں بھارتی کردار کیلئے کچھ کرنا ہوا تو اسے ہمارے پاس ہی آنا ہو گا۔
بھارتی ذرائع ابلاغ