A PHP Error was encountered

Severity: Notice

Message: Undefined index: category_data

Filename: frontend_ver3/Templating_engine.php

Line Number: 35

اسامہ کی نعش سمندر میں بہا دی: امریکی حکام ‘ یہ غیر اسلامی ہے: جامعہ الازہر

03 مئی 2011
واشنگٹن/ قاہرہ (مانیٹرنگ نیوز + ایجنسیاں) امریکیحکام کے مطابق اسامہ بن لادن کی میت کو پاکستان میں امریکی فوجیوں نے قبضہ میں لینے کے بعد سمندر میں بہا دیا ہے۔ این این آئی کے مطابق امریکی میڈیا کے مطابق مختلف حلقوں کی طرف سے حکومت پر دباﺅ ڈالا جا رہا ہے کہ اسامہ کی نعش کی تصاویر سامنے لائی جائیں تاکہ لوگوں کو اسامہ بن لادن کے جاں بحق ہونے کا یقین ہو سکے۔ حکام نے یقین دلایا ہے جلد ہی یہ تصاویر بھی جاری کر دی جائیں گی۔ بعض رپورٹس کے مطابق اسامہ کی میت کو نامعلوم جزیرے میں دفن کردیا گیا ہے۔ امریکی میڈیا کے مطابق ایبٹ آباد میںآپریشن کے بعد اسامہ کی میت کو افغانستان میں امریکہ کے ایئربیس بگرام لے جایا گیا جہاں پر تھوڑی دیر رکھنے کے بعد ہیلی کاپٹر کے ذریعے نامعلوم مقام پر لے جایا گیا۔ رپورٹس میں کہا گیا ہے کوئی بھی ملک ان کی تدفین کے لئے جگہ دینے کو تیار نہ تھا۔ مانیٹرنگ نیوز کے مطابق امریکہ نے اسامہ بن لادن کی نعش سعودی عرب کو دینے کی پیشکش کی تھی برطانوی میڈیا کے مطابق سعودی حکومت نے اسامہ کی نعش لینے سے انکار کر دیا۔ سعودی عرب کے انکار کے بعد اسامہ کی نعش کو اسلامی رسومات کی ادائیگی کے بعد سمندر برد کر دیا گیا۔ اے ایف پی کے مطابق جامعہ الازہر کے ترجمان نے کہا ہے کہ نعشوں کو دریا برد کرنا خلاف اسلام ہے۔ انہوں نے کہا کہ اسامہ بن لادن کی میت کے بارے میں یہ کہنا کہ اسے سمندر برد کر دیا گیا ہے یہ طریقہ غیر اسلامی ہے۔
نعش سمندر برد