یہ ہمارے ممبران اسمبلی!

03 مارچ 2010
مکرمی! لیجئے الیکشن کمشن آف پاکستان نے اراکین پارلیمنٹ (سینیٹرز‘ ایم این اے) کے اثاثہ جات کے گوشواروں کو جاری کر دیا ہے۔ ان گوشواروں میں دی جانے والی معلومات کو دیکھ کر انسان حیرت میں ڈوب جاتا ہے کیونکہ اس میں حیرت کے کتنے ہی پہلو موجود ہیں۔ گوشواروں میں اراکین پارلیمنٹ نے اپنے جو اثاثہ جات ظاہر کئے ہیں وہ نہ ہونے کے برابر ہیں حالانکہ بڑے بڑے جاگیردار‘ بڑے صنعتکار اور جائیدادوں کے مالک اسمبلی میں نظر آتے ہیں۔ کتنی حیرت کی بات ہے کہ جن کے پاس جائیداد اور اثاثہ جات نہیں وہ اسمبلی میں کیسے پہنچ گئے حالانکہ اس زمانے میں اسمبلی تک پہنچنا جوئے شیر لانے کے مترادف ہے کسی عام آدمی کےلئے الیکشن کا تصور ہی محال ہے کجا کہ وہ الیکشن میں حصہ لے اور پھر کامیاب بھی ہو جائے کیونکہ الیکشن میں پیسہ بہت زیادہ استعمال ہوتا ہے دیگر عوامل بھی اپنی جگہ اثرانداز ہوتے ہیں مگر جس طرح پیسے کا استعمال شروع ہو گیا ہے اس سے کسی عام سیاسی کارکن کا حصہ لینا بھی ممکن نہیں پھر ایسے میں کم اثاثہ جات کے ساتھ پارلیمنٹ میں پہنچ جانا حیرت انگیز ہے کہ نہیں؟ خدا ہمارے اوپر رحم فرمائے اور ہم سچ کا دامن تھام لیں۔ سچ کا دامن تھام لینے سے ہی شائد اہل پاکستان کے دلدر دور ہو سکیں اور بہتر قیادت مل سکے۔ (عمران راجہ 8-A احمد ہا¶سنگ نزد ہنجر وال ملتان روڈ لاہور)