کراچی : بھاشا ڈیم سے سندھ کے پانی پر کوئی فرق نہیں پڑے گا : شمس الملک

03 مارچ 2010
کراچی (خصوصی رپورٹ) واپڈا کے سابق چیئرمین شمس الملک نے کہا ہے کہ بھاشا ڈیم کی تعمیر سے سندھ کے پانی پر کوئی فرق نہیں پڑے گا۔ ڈیم کی مخالفت کرنیوالے سندھ کے خیرخواہ نہیں ہیں۔ دعوے سے کہتا ہوں کہ بھاشا یا کالاباغ ڈیم کی تعمیر سے نہ صرف سندھ بلکہ پنجاب اور دیگر صوبوں کے حصے کا پانی بھی بڑھے گا۔ سندھ کی جانب سے بھاشا ڈیم کی تعمیر پر اعتراض کے حوالے سے اپنے ردعمل میں سابق چیئرمین واپڈا نے خصوصی گفتگو میں کہا ہے کہ کیا تربیلا اور منگلاڈیم بننے سے سندھ کو نقصان ہوا ہے؟ حقیقت میں بڑے ڈیم بننے سے قبل ربیع کے مہینے میں سندھ کو صرف 10 ملین ایکڑ فٹ پانی ملتا تھا مگر اب ان کو 47 فیصد زائد یعنی 14.7 ملین ایکڑ فٹ پانی ملتا ہے۔ شمس الملک نے مزید کہا کہ دنیا نے جس راہ پر چل کر ترقی کی، ہم اس کے الٹ چل رہے ہیں۔ امریکہ نے 4 ہزار ڈیم بنا کر ترقی کی، بھارت 4 ہزار ڈیم بنا کر ترقی کی راہ میں آگے بڑھ رہا ہے۔ ہم نے صرف 2 بڑے اور 68 چھوٹے ڈیم بنائے، اب آپس میں دست و گریبان ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بھاشا کیا، کالاباغ ڈیم ختم کرنا بھی ملک دشمنی ہے۔ اس وقت ہمیں تھرمل سے بجلی 15 روپے یونٹ اور تربیلا سے 49 پیسے یونٹ مل رہی ہے۔ اگر کالاباغ اور بھاشا ڈیم بن گئے تو اس سے بھی کم ریٹ پر بجلی دستیاب ہو گی لہٰذا سندھ کارڈ کو عوام کے فائدے کیلئے استعمال کیا جانا چاہئے۔