کم وزن کے پیکٹ فروخت کرنے والی گھی ملوں کیخلاف کارروائی کی جائیگی

03 مارچ 2010
لاہور (کامرس رپورٹر) چیئرمین ٹاسک فورس برائے اشیائے ضروریہ اےس اے حمےد نے کہا ہے کہ بعض گھی ملےں کم قےمت کے دھوکے مےں عوام کو کم وزن کے گھی کے پےکٹ اورپاو چ فروخت کررہی ہےں جو تجارتی اور اخلاقی بددےانتی کے علاوہ قانوناً جرم بھی ہے اور پنجاب حکومت ایسا کرنےوالی گھی ملوں کے خلاف سخت کارروائی کرے گی۔ پاکستان بناسپتی مینوفیکچررزایسوسی ایشن کے ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ یہ گھی ملیں ہزار گرام کی بجائے 900گرام کے پیکٹ اور لیٹر سے کم وزن کے پاﺅ چ فروخت کرتی ہیں اور سادہ لوح لوگ کم قیمت کے دھوکے میں یہ گھی اور آئل خرید لیتے ہیں ۔ایس اے حمید نے کہا کہ صوبے بھر کے ڈی سی اوز کو اس حوالے سے کارروائی کی ہدایات جاری کردی گئی ہیں ۔ اس موقع پر ایسوسی ایشن کے ارکان نے بتایا کہ پنجاب حکومت کی ہدایات پر گھی اور پاﺅچ کی پیکنگ پر تاریخ تیاری استعمال کی آخری تاریخ صارف قیمت اوراجزائے ترکیبی درج کئے جارہے ہیں۔ اجلاس کے دوران پرائس کنٹرول ایکٹ پر مکمل عمل درآمد کے حوالے سے متعدد تجاویز پربھی غور کیا گیا۔