ہاکی ورلڈ کپ میں پاکستان کی سپین کیخلاف فتح ٹیم سپرٹ کا نتیجہ ہے : سابق کھلاڑی

03 مارچ 2010
لاہور (سپورٹس رپورٹر) ورلڈکپ ہاکی ٹورنامنٹ پاکستان ہاکی ٹیم کی سپین کے خلاف میچ میں جیت کو سابق کھلاڑیوں نے ٹیم سپرٹ کا نتیجہ قرار دیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ ٹیم کی دفاعی لائن نے شاندا کھیل پیش کیا اور سپین کی فاروڈ لائن کو ناکام بنائے رکھا۔ پاکستان ہاکی ٹیم کے سابق چیف کوچ خواجہ ذکا الدین نے نوائے وقت سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان ٹیم کو اگلے میچوں میں بھی جارحانہ کھیل پیش کرنا چاہیے اور مزید محنت کرنا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ نوجوان کھلاڑی عباس حیدر اور محمد زبیر کو میچ میں زیادہ سے زیادہ مواقعے ملنے چاہیے دونوں ینگ کھلاڑی ہے زور لگا سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا میچ میں پاکستان کی ڈیفنس لائن نے بہت اچھا کھیل پیش کیا تاہم فاروڈ لائن کو جتنے موو بنانے چاہیے تھے وہ ان سے نہیں بن سکے۔ اولمپیئن محمد اخلاق نے کہا کہ ایک شکست کے بعد بیان بازی نہیں کرنی چاہیے سپین کے خلاف ٹیم نے شاندار کھیل پیش کیا۔ انہوں نے کہا کہ ابھی ٹورنامنٹ تمام ٹیموں کے لیے اوپن ہے۔ انشااﷲ پاکستان ٹیم اگلے میچز میں بھی کامیابی حاصل کر کے ٹورنامنٹ کے سیمی فائنل تک رسائی حاصل کرے گی۔ محمد اخلاق نے کہا سپین کے خلاف جیت سے قومی کھلاڑیوں کا مورال بلند ہو گیا ہے جو اگلے میچز میں کام آئے گا۔ سلیکشن کمیٹی کے رکن اور سابق کپتان خالد بشیر کا کہنا تھا کہ انہیں خوشی ہے کہ پاکستان ٹیم ردھم میں بہت جلد واپس آ گئی۔ انہوں نے کہا پاکستانی ٹیم کی پہلے میچ میں بھارت کے ہاتھوں ہونی والی شکست پر مایوسی ضرور ہوئی تھی لیکن کھلاڑیوں نے شاندار کھیل کے ذریعے ثابت کر دیا کہ وہ بہترین ٹیم ہے۔

الہامی سپرٹ

پیغمبر اسلامؐ دنیائے قدیم اور دنیائے جدید کے درمیان کھڑے ہوئے دکھائی دیتے ...