احتساب عدالت : شریف خاندان کے خلاف ایون فیلڈ ریفرنس کا فیصلہ محفوظ ،6جولائی کو سنایا جائیگا

Jul 03, 2018 | 21:14

احتساب عدالت نے ایون فیلڈ ریفرنس کا فیصلہ محفوظ کر لیا۔ ایون فیلڈ ریفرنس کا فیصلہ 6جولائی کو سنایا جائے گا۔ احتساب عدالت نے نواز  شریف ،مریم نواز اور کیپٹن (ر)صفدر کے خلاف ایون فیلڈ ریفرنس کا فیصلہ محفوظ کر

لیا ہے۔ فیصلہ مریم نواز کے حتمی دلائل مکمل ہونے پر محفوظ کیا گیا ہے۔ ایون فیلڈریفرنس کا فیصلہ 6 جولائی بروز جمعہ کو سنایا جائے گا۔ ایون فیلڈ ریفرنس کاٹرائل دس ماہ میں مکمل کیا گیا ہے۔ ایون فیلڈ ریفرنس میں سابق وزیر اعطم نواز

شریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز احتساب عدالت میں 70سے زائد پیشیاں بھگت چکےہیں۔ ایون فیلڈ ریفرنس کی سماعت احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے کی۔احتسابعدالت میں کیمرا اور 2 سکرینیں نصب کی گئی تھیں۔ ایون فیلڈ ریفرنس میں سابقوزیراعظم نواز شریف کے بیٹوں حسین نواز اور حسن نواز کو اشتہاری قرار دے دیا جا

چکا ہے۔ احتساب عدالت میں ایون فیلڈ ریفرنس کی کل 107 سماعتیں ہوئیں۔نواز شریفاور مریم نواز 78سماعتوں میں احتساب عدالت میں پیش ہوئےجب کہ واجد ضیا پر لگبھگ دو ہفتے تک وکلا صفائی نے جرح کی۔ ایون فیلڈ ریفرنس میں 18گواہوں کے بیاناتقلمبند کیے گئے۔لندن سے 2 گواہوں  کے بیانات ویڈیولنک پررکارڈ کیے گئے.جب کہاحتساب عدالت کے باہر نواز شریف اور مریم نواز کے بیانات بھی میڈیا کی زینت بنے

رہتے تھے۔یاد رہے شریف خاندان کے خلاف ایون فیلڈ ریفرنس میں قومی احتساببیورو(نیب)کے ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل نے حتمی دلائل کے دوران کہ تھا ا کہ سابقوزیراعظم نواز شریف ہی لندن فلیٹس کے اصل مالک ہیں جب کہ آف شور کمپنی کے ذریعےاصل ملکیت چھپائی گئی۔یاد رہے کہ سپریم کورٹ کے پاناماکیس سے متعلق 28 جولائی2017 کے فیصلے کی روشنی میں نیب نے شریف خاندان کے خلاف 3 ریفرنسز احتساب عدالت

میں دائر کیے جو ایون فیلڈ پراپرٹیز، العزیزیہ اسٹیل ملز اور فلیگ شپ انویسمنٹ سے متعلق ہیں۔

مزیدخبریں