ایمنسٹی سکیم کے بعد وزیر اعظم ہیلتھ انشورنس سکیم بھی متنازعہ ہو گئی

03 جنوری 2016

اسلام آباد (آن لائن) پی آئی اے نجکاری اور ایمنسٹی سکیم کے بعد وزیر اعظم ہیلتھ انشورنس سکیم بھی متنازعہ ہوگئی ہے۔ وزیراعظم کی ہیلتھ انشورنش سکیم صوبہ پنجاب اور بلوچستان تک محدود ہو گئی ہے ۔صوبہ سندھ اور خیبرپختونخوا نے وفاقی ہیلتھ انشورنش سکیم قبول کرنے سے صاف انکار کر دیا ہے۔ پی آئی اے نجکاری اور ایمنسٹی اسکیم کے بعد وزیراعظم ہیلتھ انشورنس سکیم بھی متنازعہ ہو گئی ہے ذرائع کے مطابق سندھ اور خیبرپختونخوا حکومتوں نے وفاق کے ہیلتھ انشورنس سکیم کو متنازعہ سکیم قرار دے دیا ہے کیونکہ صحت کا شعبہ صوبائی معاملہ ہے جس پر دونوں صوبوں نے مسترد کر دیا ہے حکومت سندھ کے مطابق یہ اٹھارہویں ترمیم کی سراسر خلاف ورزی ہے اور اس طرح کے پروگرام پر حکومت سندھ کو اعتماد میں نہ لینا عوامی مینڈیٹ کی خلاف ورزی ہے اس حوالے سے خیبرپختونخوا حکومت نے بھی شدید تحفظات کا اظہار کیا ہے اور اس سکیم کو مکمل طور پر قبول کرنے سے انکار کر دیا ہے ۔ اس کے علاوہ صوبوں کا کہنا تھا کہ فنڈ کی پچاس فیصد ادائیگی بھی صوبوں کے ذمے ڈال دی گئی ہے ان کے مطابق صوبے پہلے ہی سے صحت پروگرام شروع کر چکی ہے اور بجٹ کا بڑا حصہ صحت پروگرام پر لگایا جا رہا ہے ۔