امریکہ میں پر تشددواقعات روکنے کیلئے یکطرفہ اقدامات کرینگے: اوباما

03 جنوری 2016

واشنگٹن(آن لائن)امریکہ کے صدر براک اوباما نے کہا ہے کہ ملک میں ہتھیاروں کے ذریعے پر تشدد واقعات روکنے کیلئے وہ یکطرفہ اقدام اْٹھائیں گے۔ 2016 کے آغاز کے بعد عوام سے اپنے پہلے خطاب میں صدر اوباما نے کہا کہ وہ اس سلسلے میں اٹارنی جنرل سے ملاقات کریں گے اور یہ جائزہ لیں گے کہ وہ ہتھیاروں پر کنٹرول کیلئے کیا کچھ کر سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا ہتھیاروں سے متعلق قانون سازی پر اتفاق رائے پیدا نہ کرنا بڑی ناکامی ہے۔ نئے سال پر اپنے پہلے خطاب میں صدر نے کہا کہ انہیں اس بارے کوئی اقدام نہ اْٹھانے پر بچوں، والدین اور اساتذہ کی جانب سے بہت سے خطوط موصول ہورہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ’ہم جانتے ہیں کہ ہم ہر پُر تشدد کارروائی روک نہیں سکتے لیکن ہم کسی ایک کو تو روکنے کی کوشش کر سکتے ہیں۔ صدر نے تسلیم کیا کہ ہتھیاروں پر قانون سازی پر پارلیمان میں اتفاق رائے پیدا کرنے میں وہ کامیاب نہیں ہو سکے ہیں اور یہی اْن کے دورِ صدارت کی سب سے بڑی ناکامی ہے۔ دوسری طرف تجزیہ کاروں نے کہا ہے کہ صدر کو اس سلسلے میں مخالفت کا سامنا کرنا پڑیگا۔