2015ئ: سیلابوں زلزلوں اور وقت کی دست برد کے باعث خطرناک قرار دئیے گئے سینکڑوں سکولوں کی مرمت نہ ہو سکی

03 جنوری 2016

لاہور (لیڈی رپورٹر) سیلابوں، زلزلوں اور وقت کی دست برد کے باعث خطرناک قراردئیے گئے پنجاب کے سینکڑوںسکولوںکی تعمیرومرمت کیلئے مختص فنڈز 9ارب روپے سال 2015میںخرچ نہ کئے جاسکے جس سے ان سکولوںکی مرمت کام 2015میں بھی مکمل نہ کیا جاسکا اور ہزاروںطلبہ وطالبات کے علاوہ سینکڑوں اساتذہ کی زندگیوںکو خطرات لاحق رہے۔ دریں اثنا محکمہ تعلیم کے حکام نے نوائے وقت کو بتایا کہ خطرناک قرار دیئے گئے سکولوں پرکام جاری ہے۔ مالی سال ختم ہونے تک اس حوالے سے تعمیرومرمت کافی آگے بڑھ چکی ہوگی، اس ضمن میں 21ارب روپے منظور ہوئے تھے جوتین مراحل میںملیںگے تاہم دستیاب وسائل کے اندر کام کیاجارہاہے۔ اس حوالے سے پنجاب ٹیچرز یونین کے رہنما رانا لیاقت علی نے کہاکہ حکومت ترجیحی بنیادوںپرتعمیرومرمت کاکام کرے اور یکم اپریل سے شروع ہونے والے نئے تعلیمی سال سے قبل یہ کام مکمل کیاجائے۔