براہمداغ سے کئی ملاقاتیں ہوئیں، ریاست سے انکی صلح کا کافی امکان ہے‘وزیراعظم اور فوج ملاقاتوں سے آگاہ تھے: ڈاکٹر مالک

03 جنوری 2016

اسلام آباد+ کوئٹہ (ایجنسیاں) سابق وزیراعلیٰ بلوچستان ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ نے انکشاف کیا ہے کہ براہمداغ بگٹی سے جنیوا میں انکی کافی ملاقاتیں ہوئی ہیں، ان ملاقاتوں کی تفصیلات سے فوج اور وزیراعظم بھی آگاہ تھے۔ ریاست اور براہمداغ میں صلح کے کافی امکانات ہیں۔ نجی ٹی وی کے پروگرام میں انہوں نے کہا کہ میں نے براہمداغ سے کہا کہ آپ نواب اکبر بگٹی کی سیاست کو ساتھ لیکر چلیں جب نوازشریف سے آخری بار ملا تو میں نے انہیں یہی کہا کہ ہمارے ایجنڈا کو آگے بڑھایا جائے، یہی بات میں نے کور کمانڈر عامر ریاض سے بھی کہی تھی کہ جنرل جنجوعہ نے اس پر کافی پیشرفت کی لہٰذا اسی ایجنڈا کو آگے لے جانے کی ضرورت ہے میں اور نئے وزیراعلیٰ ایک ہی پیج پر تھے اور انشاء اللہ ایک ہی پیج پر رہیں گے۔ دوسری جانب سابق وزیراعلیٰ بلوچستان ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ نے وزیراعظم کا مشیر بننے سے معذرت کرلی ہے۔ نوازشریف کی طرف سے بلوچستان میں انتقال اقتدار کے بعد سابق وزیراعلیٰ ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ کو خصوصی مشیر بننے کی پیشکش کی گئی تھی جس پر انہوں نے حتمی جواب دینے کیلئے وقت طلب کیا تھا۔ گزشتہ روز ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ نے وزیر اعظم نوازشریف کو بھجوائے گئے پیغام میں ان کا مشیر بننے سے معذرت کرلی۔