افغانستان اور وسطی ایشیا میں دہشتگرد بچوں کو بھی خودکش بمبار بنا رہے ہیں:رپورٹ

03 جنوری 2016

بر لن(آن لائن)افغانستان اور وسطی ایشیا کے دیگر ممالک میں دہشت گرد بچوں کو بھی خود کش بمبار بنانے میں مصروف ہیں۔ اغوا کرنے کے بعد دہشت گردی کے تربیتی مراکز میں پہنچا دیا جاتا ہے۔مغربی ممالک کے ذرائع ابلاغ عراق اور شام میں دہشت گرد تنظیم داعش کی جانب سے نوجوانوں اور بچوں کے لیے بنائے جانے والے خصوصی مراکز کے بارے میں اکثر خبریں دیتے رہتے ہیں۔ ماسکو میں افغان امور سے متعلق ایک ادارے کے ماہر اندریخ سیرینکو کہتے ہیں قندوز میں طالبان نے حملوں کی تربیت فراہم کرنے کے لیے ایک اہم مرکز قائم کیا ہے۔ چھ سے آٹھ سال کے بچوں کو یہ سکھایا جاتا ہے کہ کس طرح سڑکوں کے کنارے بارودی سرنگیں نصب کی جاتی ہیں۔