خفیہ اداروں نے مولانا عبدالعزیز کے داماد حافظ سلمان کو 7 ماہ بعد رہا کر دیا

03 جنوری 2016

اسلام آباد (نمائندہ نوائے وقت) لال مسجد کے خطیب مولانا عبدالعزیز کے داماد حافظ سلمان ایڈووکیٹ کو سات ماہ بعد خفیہ اداروں نے رہا کر دیا ہے۔ حافظ سلمان ایڈووکیٹ رہائی کے بعد لاہور میں واقع اپنی رہائش گاہ پہنچ گئے۔ شہداءفاﺅنڈیشن کے جاری کئے گئے بیان کے مطابق لال مسجد کے خطیب مولانا عبدالعزیز کے داماد حافظ سلمان ایڈووکیٹ کو جمعہ کی شب آٹھ بجے کے قریب خفیہ اداروں نے رہا کیا۔ حافظ سلمان ایڈووکیٹ کی رہائی سپریم کورٹ کے سترہ دسمبر کے اس حکم کے نتیجے میں عمل میں آئی ہے جس میں سپریم کورٹ نے مولانا عبدالعزیز کی بیٹی اور حافظ سلمان کی اہلیہ طیبہ دعا غازی کو ہدایت کی تھی کہ وہ اپنے شوہر کی خفیہ اداروں کی تحویل میں موجودگی کے خلاف آئینی پٹیشن دائر کریں، سپریم کورٹ پٹیشن کی بنیاد پر موسم سرما کی تعطیلات کے بعد اس معاملے کو دیکھے گی۔ حافظ سلمان غازی ایڈووکیٹ کو 24 جون 2015 ءکو خفیہ اداروں نے داعش سے تعلق کے شبہ میں لاہور سے حراست میں لیا گیا تھا۔