مسئلہ کشمیر حل ہونے تک بھارت سے دوستی و تجارت ممکن نہیں: حامد رضا

03 جنوری 2016

لاہور (سپیشل رپورٹر) سنی اتحاد کونسل کے چیئرمین صاحبزادہ حامد رضا نے کہا ہے کہ عالمی برادری مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے اپنا کردار ادا کرے۔اقوام متحدہ مقبوضہ کشمیر میں ہو نیوالی انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر آنکھیں بند کررکھی ہیں۔ پارلیمنٹ کی کشمیر کمیٹی کو فعال کیا جائے۔مسئلہ کشمیر حل ہونے تک بھارت سے دوستی اور تجارت نہیں ہوسکتی۔ مسئلہ کشمیر خطے میں امن کے راستے میں بڑی رکاوٹ ہے۔دنیا میں انسانی حقوق کی سب سے زیاد ہ خلاف ورزیاں مقبوضہ کشمیرمیں ہوتی ہیں۔ آزادی کشمیریوں کا مقدر ضرور بنے گی۔انہوں نے مزید کہا کہ بھارت نے ریاستی طاقت کے ذریعے کشمیر پر قبضہ کررکھا ہے۔بھارتی فوج ہزاروں بے گناہ کشمیریوں کوقتل کرچکی ہے اور ہزاروں حریت پسند بھارتی فوج کے ٹارچر سیلوں میں اذیت برداشت کررہے ہیں۔ بھارت زیادہ دیر طاقت کے ذریعے کشمیریوں پر اپنا تسلط قائم نہیں رکھ سکتا۔ مسئلہ کشمیر تقسیم کشمیر کا نامکمل ایجنڈا ہے۔ مسئلہ کشمیر حل کرکے خطے میں امن قائم ہو سکتا ہے۔ بھارت سے دوستی کی باتیں کرنے والے کشمیری شہداء کے خون سے غداری کررہے ہیں۔ پاکستانی قوم کیلئے امن کے نام پر خطے میں بھارت کی بالادستی قبول نہیں ہے۔ پاکستانی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے عالمی سطح پر آواز اٹھائے اور پاکستان کے ہر سفارتخانے میں کشمیر ڈیسک قائم کیا جائے۔کشمیری حریت پسند آزادی کی جنگ لڑ رہے ہیں۔ بھارت برصغیر کا بھیڑیا بن چکا ہے۔