نئی رحمتؐ کی ولادت سے بڑھ کر انسانیت کیلئے کوئی خوشی نہیں

03 جنوری 2016

لاہور (لیڈی رپورٹر) سپیکرقومی اسمبلی ایازصادق کی اہلیہ ریما ایاز نے کہاہے کہ نبی رحمتؐ کی ولادت مبارکہ سے بڑھ کوانسانیت کے لئے کوئی خوشی نہیں، نبی کریمؐ کی حیات مبارکہ کاہرہر لمحہ پوری انسانیت کیلئے’’ مینارۂ نور‘‘ ہے ۔سیرت النبیؐ پرعمل پیرا ہونے سے حقیقی امن کا قیام ممکن ہے۔ دنیا و آخرت میں حقیقی کامیابی حضور نبی کریمؐ کی سیرت کواپنانے میں مضمرہے۔معاشرے میں اخوت وبھائی چائے کوفروغ دینے کی اشدضرورت ہے۔انہوں نے ان خیالات کااظہارگزشتہ روز نعیمین ایسوسی ایشن پاکستان شعبہ خواتین کے زیراہتمام سالانہ میلاد النبیؐ کانفرنس برائے خواتین سے خطاب میں کیا۔کانفرنس سے رکن پنجاب اسمبلی وناظمہ جامعہ سراجیہ نعیمیہ نبیرہ عندلیب نعیمی، ڈاکٹر نوشین، ساجدہ میر نسیم، کوثر پروین، سمیراعبدالجبار نعیمی،سمیت دیگر ممتاز خواتین رہنمائوں نے بھی خطاب کیا۔کانفرنس میںایم پی اے شہزادی کبیر،بیگم ڈاکٹر سرفرازاحمدنعیمی شہید، بیگم تاجور نعیمی،بیگم مفتی قیصر شہزاد نعیمی، مس فرحت یاسر،مس صفیہ ، مذہبی وسماجی، سول سوسائٹی اورمدارس کی ناظمات و معلمات، اساتذہ وطالبات سمیت ہزاروں خواتین شر یک تھیں۔ کانفرنس میں جامعہ سراجیہ نعیمیہ کی طالبات نے نبی کریمؐ کی شان میںگلہائے عقیدت پیش کرکے جشن کاسماں باند ھ دیا۔اس موقع پرطالبات نے سانحہ آرمی پبلک سکول پشاور کے شہداء کوخراج عقیدت پیش کیا۔کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے نبیرہ عندلیب نعیمی نے کہاکہ دہشتگردی کے خاتمے کے لئے اسلام کے ’’فلسفہ امن‘‘ کو اپناہوگا۔ حضور نبی کریمؐ کی سیرت طیبہ انسانیت کے لئے مشعل راہ ہے۔نبی کریمؐ کی ولادت مبارکہ سے انسانیت کوامن و محبت کا پیغام ملا۔ پرامن معاشرے کے قیام کے لئے نئی نسل کو، رواداری، صبرو تحمل، برداشت اور انصاف جیسے اوصاف سکھائے جائیں۔اسلام اورمسلمانوں کے دامن کو دہشت گردی کے بدنماداغ سے صاف کرنے کیلئے امن وآشتی کے پیغام کوعام کرنا ہوگا۔نبی آخرالزمان ؐکے اسوئہ حسنہ کو اپناکرکے دنیاکو امن کاگہوارہ بنایا جا سکتا ہے۔ موجودہ دو رمیں اسلام کے فلسفہ امن کو عام کرنے کی اشدضرورت ہے۔ایم پی اے ڈاکٹر نوشین نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ اللہ تعالیٰ نبی کریمؐ کو پوری دنیاکیلئے رحمت بنا کرمبعوث فرمایا۔ آپؐ کی فیضان رحمت کسی زمان یامکان تک محدود نہیں بلکہ آپ کی رحمت تمام کائنات والوں کیلئے ابدی او ر دائمی ہے۔ ساجدہ میر نے کہاکہ زندگی کاکوئی ایساشعبہ نہیں جہاں آپ ؐ سے اسوئہ حسنہ کے انمٹ نقوش نہ چھوڑے ہوں۔ہمیں اپنی زندگیوںمیں سیرت النبی ؐ کو اپنانے کی ضرورت ہے۔سمیرا عبدالجبار نعیمی نے خطاب کرتے ہوئے کیاکہ خواتین کو تعلیم یافتہ بنائے بغیرترقی کی منازل طے نہیں کی جاسکتیں۔ بنیادی اور معیاری تعلیم کا فروغ ہی خوشحال اور پُرامن پاکستان کی ضمانت ہے۔ تعلیم کو عام کر کے ہی ہم انتہا پسندی اور دہشت گردی کی لعنت سے چھٹکارا حاصل کر سکتے ہیں۔

مری بکل دے وچ چور ....

فاضل چیف جسٹس کے گذشتہ روز کے ریمارکس معنی خیز ہیں۔ کیا توہین عدالت کا مرتکب ...