لاپتہ افراد کیس: سپریم کورٹ انصاف کی آخری امید ہے: آمنہ جنجوعہ

03 جنوری 2016

اسلام آباد (نیشن رپورٹ) ڈیفنس آف ہیومن رائٹس کے مطابق 2013ء سے سپریم کورٹ میں 749 لا پتہ افراد کے مقدمات زیر التوا ہیں سینکڑوں خاندان انصاف کے لئے سپریم کورٹ کی جانب دیکھ رہے ہیں جبکہ دیگر ادارے اور کمشنز انصاف فراہم کرنے میں ناکام ہو گئے ہیں۔ڈیفنس آف ہیومن رائٹس کی چیئرپرسن آمنہ مسعود جنجوجہ نے کہا کہ سپریم کورٹ آخری امید ہے کیونکہ یہ عدالت کسی بھی خفیہ ادارے کے افسر کو سمن کرنے کا اختیار رکھتی ہے۔ ذرائع کے مطابق حکومت کی جانب سے بنائے گئے کمشن کے سر براہ تفتیش کے بجائے رپورٹ تیار کرنے میں دلچسپی لیتے رہے۔ کمشن کی کارروائی بند کمرے میں ہوتی رہی۔لا پتہ افراد کے مقدمات کی سماعت کیلئے لارجر بنچ بھی نہ بن سکا۔